برا وقت برا نہیں ہوتا


ہم زندگی میں کچھ لوگوں کو بہت زیادہ اہمیت دیتے ہیں اور سوچتے ہیں کہ یہ لوگ ہمارے مددگار اور ہمدرد ہیں۔

لیکن اب کے دور میں یہ بات حقیقت بنتی جا رہی کہ لوگ اگر آپ سے محبت کرتے ہیں تو صرف اور صرف آپ کی ترقی اور پیسے کی وجہ سے۔

اور اگر خدا نہ کرے آپ اپنی ترقی سے ناکامی کی طرف آتے ہیں۔ تو یہ سب دوست  جو کہ ترقی کے وقت آپ کے مددگار ہوتے ہیں۔۔۔۔۔ لیکن وہ ہی لوگ آپ کی ناکامی، مشکل حلات اور برے وقت میں غائب ہونے اور ساتھ چھورنے میں زرا بھی وقت نہیں لگاتے۔


یہ وہ لوگ ہیں جو آپ سے نہیں بلکہ آپ کی ترقی، خوشحالی اور پیسے کے ساتھ محبت کرتے ہیں۔ اور اگر آپ کی مدد بھی کرتے ہیں تو صرف اسی لئے تاکہ وقت آنے پر وہ لوگ آپ سے ،،،،،، اپنا کام کروا سکے۔


یہ بلکل اسی طرح ہے جیسا کہ خوشی میں تو سب ساتھ دیتے ہیں لیکن مصیبت آنے  اپنا کوئی ایک دوست مشکل سے کام آتا ہے۔ 

اگر دیکھیں تو ہمیں یہ سب کونسی چیز سکھاتی ہے کہ کون آپ کا اپنا ہے، کون آپ کا دوست ہے اور کون آپ کا دشمن۔

دوستوں یہ ہمارا برا وقت ہے۔ جو ہمیں اپنے دوست اور دشمن کی اصل پہچان دکھاتا ہے۔

اسی لیے لیے میں کہتا ہوں کہ برا وقت برا نہیں ہوتا۔
برا وقت ہمیں بہت کچھ سیکھا جاتا ہے لیکن ہمیں پتا بھی نہیں چلتا۔

یہ آپ کو وہ سبق سکھاتا  ہے جو آپ کو زندگی بھر کتابیں پڑھنے سے بھی نہیں ملتا۔
برا وقت آپ کو ان سب لوگوں کی پہچان کرنا سکھاتا ہے جو کوئی دوسرا نہیں سیکھا سکتا۔
برا وقت آپ کا وہ استاد ہے۔ جس سے اچھا،،،،،، آپ کے لئے کوئی دوسرا استاد نہیں ہو سکتا۔

آپ کا برا وقت آپ کو مشکل سے نکالنے میں مدد کرتا ہے۔
ہماری چھوٹی سی سوچ کو بہت بڑا کر دیتا ہے۔
آپ دیکھیں گے کہ جب بھی ہمارے اوپر برا وقت آتا ہے۔ تو وہ ہماری غلطیوں کو درست کرتا ہے۔
برا وقت ہمارا سب سے اچھا دوست ہے کیونکہ کامیابی کا راستہ بغیر برے وقت اور تجربے کے مکمل نہیں کیا جا سکتا۔


بس آپ یوں کہہ لیں کہ برا وقت ہماری خوشیوں کی چابی ہے۔ اگر آج آپ برے وقت  میں ہیں تو پھر جلد آپ کی خوشیوں کے تالے کھلنے والے ہیں۔

کسی نے سچ ہی کہا ہے کہ ہماری زندگی میں جو بھی ہوتا ہے اچھے کیلئے ہوتا ہے۔


اگر غلط ہوتا ہے۔ تو اس لئے ہوتا ہے۔ تاکہ ہم زندگی میں ہونے والی حقیقت کو جان سکیں۔ 
لوگوں کے اصلی چہرے کو پہچان سکیں۔


عقلمند لوگ وہ ہیں جو اپنے برے وقت سے ذرا بھی نہیں ڈرتے اور راستے میں آنے والی ہر مشکل کو پوری طاقت اور حوصلے کے ساتھ اس کا مقابلہ کرتے ہیں۔ 
ڈرنا اور ہمت ہارنا کمزور لوگوں کی نشانی ہے۔ 

0 Comments: