کہیں آپ حسد کرنے والے انسان تو نہیں

ہماری زندگی کی پہچان ہمارے آس پاس موجود دوستوں سے ہوتی ہے۔ اور یقینا آپ بھی کسی نہ کسی انسان کے دوست ضرور ہونگے۔

اس بات سے کچھ فرق نہیں پڑتا کہ آپ کسی کے دوست ہیں یا پھر کوئی اور آپ کا دوست ہے۔ میں صرف یہ کہنا چاہتا ہو۔ کہ دوست یا تو آپ کے سچے دوست ہوتے ہیں۔ یہ پھر اندد ہی اندر آپ سے حسد کرتے ہیں۔

اس آرٹیکل میں،،،،،،،، میں حسد کرنے والے دوستوں کی علامات اور نقصان بتانے والا ہو۔ اور آپ نے اس بات کا خیال کرنا ہے۔ کے آپ کا نام حسد کرنے والے دوستوں میں شامل نہ ہو۔ 


ایک بات جو سب سے اہم ہے کہ حسد کرنے والا انسان نا تو خود خوش رہتا ہے اور نہ ہی دوسروں کو خوش رہنے دیتا ہے ہے۔
نا تو خود زندگی کو جیتا ہے اور نہ ہی دوسروں کو جینے دیتا ہے۔
اس کے علاوہ اپنی غلطی کو غلطی نہیں سمجھتا
 اور دوسروں کی کامیابی کو اپنی ناکامی سمجھتا ہے۔

تو سب سے پہلے آپ حسد کرنے والوں کی پہچان کیسے کر سکتے ہیں۔ اس کے لیے کچھ پوائنٹ آپ کے ساتھ شیئر کرو گا۔

1)
حسد کرنے والے لوگ اپنے آس پاس لوگوں کی کامیابی سے غمگین ہوتے ہیں۔
2)
ایسے لوگوں اپنے دوستوں کو ہمیشہ ہارا ہوا اور ناکام دیکھنا چاہتے ہیں۔

3)
یہ لوگ نہ تو خود ترقی کرتے ہیں اور نہ ہی اپنے دوستوں کو کو ترقی کرتے ہوئے دیکھنا چاہتے ہیں۔

4)
حسد کرنے والے لوگوں کے لئے زندگی کا ایک ایک لمحہ گزارنا مشکل ہو جاتا ہے۔ چاہے ان کے پاس دنیا بھر کی دولت ہی کیوں نہ ہو۔ لیکن اس دولت کے باوجود وہ کبھی بھی اپنی زندگی سے خوش نہیں ہوتے۔


اگر آپ حسد کرنے والوں میں شامل نہیں۔ تب آپ اپنی زندگی بغیر کیسی پریشانی کہ،،،،،،، آرام اور اطمینان سے گزار سکتے ہیں۔
لیکن اگر آپ لوگوں سے اور ان کی کامیابی سے جلتے ہیں۔
تب آپ کے لئے زندگی کا  ایک ایک لمحہ گزارنا بھی کسی پہاڑ سے کم نہیں۔

حسد کے نقصان:

حسد آپ کے اندر احساس کمتری پیدا کرتا ہے۔
آپ کو جھوٹ بولنے پر مجبور کرتا ہے۔
دھوکہ دینے پر مجبور کرتا ہے۔
آپ کا سکون برباد کردیتا ہے۔
آپ کے دوستوں کو آپ سے جدا کرتا ہے۔

0 Comments:

برا وقت برا نہیں ہوتا


ہم زندگی میں کچھ لوگوں کو بہت زیادہ اہمیت دیتے ہیں اور سوچتے ہیں کہ یہ لوگ ہمارے مددگار اور ہمدرد ہیں۔

لیکن اب کے دور میں یہ بات حقیقت بنتی جا رہی کہ لوگ اگر آپ سے محبت کرتے ہیں تو صرف اور صرف آپ کی ترقی اور پیسے کی وجہ سے۔

اور اگر خدا نہ کرے آپ اپنی ترقی سے ناکامی کی طرف آتے ہیں۔ تو یہ سب دوست  جو کہ ترقی کے وقت آپ کے مددگار ہوتے ہیں۔۔۔۔۔ لیکن وہ ہی لوگ آپ کی ناکامی، مشکل حلات اور برے وقت میں غائب ہونے اور ساتھ چھورنے میں زرا بھی وقت نہیں لگاتے۔


یہ وہ لوگ ہیں جو آپ سے نہیں بلکہ آپ کی ترقی، خوشحالی اور پیسے کے ساتھ محبت کرتے ہیں۔ اور اگر آپ کی مدد بھی کرتے ہیں تو صرف اسی لئے تاکہ وقت آنے پر وہ لوگ آپ سے ،،،،،، اپنا کام کروا سکے۔


یہ بلکل اسی طرح ہے جیسا کہ خوشی میں تو سب ساتھ دیتے ہیں لیکن مصیبت آنے  اپنا کوئی ایک دوست مشکل سے کام آتا ہے۔ 

اگر دیکھیں تو ہمیں یہ سب کونسی چیز سکھاتی ہے کہ کون آپ کا اپنا ہے، کون آپ کا دوست ہے اور کون آپ کا دشمن۔

دوستوں یہ ہمارا برا وقت ہے۔ جو ہمیں اپنے دوست اور دشمن کی اصل پہچان دکھاتا ہے۔

اسی لیے لیے میں کہتا ہوں کہ برا وقت برا نہیں ہوتا۔
برا وقت ہمیں بہت کچھ سیکھا جاتا ہے لیکن ہمیں پتا بھی نہیں چلتا۔

یہ آپ کو وہ سبق سکھاتا  ہے جو آپ کو زندگی بھر کتابیں پڑھنے سے بھی نہیں ملتا۔
برا وقت آپ کو ان سب لوگوں کی پہچان کرنا سکھاتا ہے جو کوئی دوسرا نہیں سیکھا سکتا۔
برا وقت آپ کا وہ استاد ہے۔ جس سے اچھا،،،،،، آپ کے لئے کوئی دوسرا استاد نہیں ہو سکتا۔

آپ کا برا وقت آپ کو مشکل سے نکالنے میں مدد کرتا ہے۔
ہماری چھوٹی سی سوچ کو بہت بڑا کر دیتا ہے۔
آپ دیکھیں گے کہ جب بھی ہمارے اوپر برا وقت آتا ہے۔ تو وہ ہماری غلطیوں کو درست کرتا ہے۔
برا وقت ہمارا سب سے اچھا دوست ہے کیونکہ کامیابی کا راستہ بغیر برے وقت اور تجربے کے مکمل نہیں کیا جا سکتا۔


بس آپ یوں کہہ لیں کہ برا وقت ہماری خوشیوں کی چابی ہے۔ اگر آج آپ برے وقت  میں ہیں تو پھر جلد آپ کی خوشیوں کے تالے کھلنے والے ہیں۔

کسی نے سچ ہی کہا ہے کہ ہماری زندگی میں جو بھی ہوتا ہے اچھے کیلئے ہوتا ہے۔


اگر غلط ہوتا ہے۔ تو اس لئے ہوتا ہے۔ تاکہ ہم زندگی میں ہونے والی حقیقت کو جان سکیں۔ 
لوگوں کے اصلی چہرے کو پہچان سکیں۔


عقلمند لوگ وہ ہیں جو اپنے برے وقت سے ذرا بھی نہیں ڈرتے اور راستے میں آنے والی ہر مشکل کو پوری طاقت اور حوصلے کے ساتھ اس کا مقابلہ کرتے ہیں۔ 
ڈرنا اور ہمت ہارنا کمزور لوگوں کی نشانی ہے۔ 

0 Comments:

پریشان اور افسردہ رہنا آپ کے لیے نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے


افسردگی اور پریشانی ہم سب کے لیے ایک بہت پیچیدہ مسئلہ ہے۔ مجھے یقین ہے کہ آپ اور میں پہلے کبھی نہیں ملے ہو گے۔ لیکن میں آپ کو پریشانی اور افسردگی کی حالت سے نکالنے میں مدد کر سکتا ہو۔ کیونکہ ہمیشہ پریشان اور افسرہ رہنا میری بھی عادت بن چکی تھی۔

اور ان سب پریشانیوں اور دماگی افسرگی سے محفوظ رہنے کے لیے ہمیں اپنے رب سے دعا کرنے کی ضرورت ہے۔ اس یقین کے ساتھ کہ کہ ہمارا رب ہر وقت ہماری دعا قبول کرنے کو تیار ہے۔ بس دعا کرنے کی ضرورت ہے جو یسوع ہمیں ہر ایک کے ساتھ قبول کرتا ہے۔


آج سے کچھ ماہ پہلے میں بھی بہت زیادہ پریشان اور دماغی افسردگی کی حالت میں تھا۔ افسردگی اورپریشانی نے میری زندگی کی ہر خوشی تباہ کر دی تھی۔ اور یہ سب مجھے اندر اور باہر سے ختم کر رہی تھی۔


یہاں تک کہ مجھے اپنے گھر والوں اور دوستوں کی برپور مدد کا سہارا تھا۔ لیکن پھر بھی مجھ پر پریشانی اور افسردگی کی حالت ہر وقت رہتی تھی۔

مجھے اپنی ایسی حالت دیکھ کر محسوس ہو رہا تھا کہ میں زندگی کی جنگ ہار رہا ہوں۔

لیکن پھر میرے دل میں ایک امید پیدا ہوئی۔ کہ میرا خدا ہر وقت میرے ساتھ ہیں۔ اور میری مدد کو بھی ہر وقت تیار ہے۔


اور ان سب پریشانیوں اور دماگی افسرگی سے محفوظ رہنے کے لیے مجھے اپنے رب سے دعا کرنے کی ضرورت ہے۔ اس یقین کے ساتھ کہ کہ میرا رب ہر وقت ہماری دعا قبول کرنے کو تیار ہے۔ بس مجھے دعا کرنے کی ضرورت ہے۔

اگر آپ ایسا سوچے گے۔ اور خدا سے مدد مانگے گے۔ اس کا شکر کرے گے۔ تب آپ کو دماغی سکون ضرور ملے گا۔ جیسا مجھے ملا ہے۔

میں نہیں جانتا کہ آپ دماغی طور پر کتنے پریشان ہیں۔ یہ ایسی پریشانی ہے۔ جس کو کم کرنے کے لیے کچھ لوگ یا تو رات میں اکیلے بیٹھ کر روتے ہیں یا پھر اپنے چہرے پر ایک جھوٹی مسکراہٹ بنا لیتے ہیں۔ تاکہ لوگوں کو اس کی پریشانی اور کسی چیز پر افسردہ ہونے کا احساس نہ ہو۔

یہ ایک سچائی ہے۔ کہ خدا ہمیں سن رہا ہے۔ اسے ہماری پرواہ ہے۔ وہ ہم سے محبت کرتا ہے۔ وہ ہم پر رحم کرنے والا ہے۔ اور اس کا کردار کبھی بھی نہیں بدلنے والا نہیں۔ خدا رحم کرنے والا ہے۔ پریشانیاں دور کرنے والا ہے اور ہمیشہ کرتا رہے گا۔ 

لہذا ، جب کبھی آپ پرشان اور افسردگی کی حالت میں ہوں۔ تو اپنے خدا سے پوری امید کے ساتھ مدد مانگے۔ اس امید کہ ساتھ کہ وہ آپ کی مدد ضرور کرے گا۔

دعا ہے۔ آپ سب کی پرشانیاں جلد ختم ہو جائے۔


1 Comments:

کامیابی کے چھ اصول


 اگر آپ کو زندگی میں کامیاب ہونا ہے- تو لوگوں کو کسی نہ کسی طریقے سے فائدہ دو۔ پھر ہی آپ کامیابی کے دروازے 
اپنے لیے کھول پاؤ گے۔


آگر آپ کو اپنی زندگی میں جلدی کچھ سیکھنا ہے۔ تو اس کا سب سے بہترین طریقہ ہے۔ دوسروں کو سیکھانا۔


آگر آپ زندگی میں پیسہ کمانا چاہتے ہیں تو صرف اپنے پیشن پر کام کریں۔ ہمیشہ وہ کام کریں جس میں آپ کو مزہ آتا ہے۔ نہیں تو آپ جلد ہی اس کام سے بورجاؤ گے۔


صیح وقت پر صیح کام کرنا آپ کی کامیابی کی زمانت ہے۔ مثال کے طور پر جب فیس بک بنی،تو وہ وقت فیس بک کے لیے بہت بہترین تھا۔ لیکن اگر آپ اج فیس بک کی طرح کوئی چیز بناتے ہو تو اتنے کامیاب نہیں بن پاؤں گے۔ اگر آپ صیح وقت پر صیح کام کرنا چاہتے ہو۔ تو پھر نیئے سے نیا تجربہ کرتے روہوں۔ 


اگر آپ اپنی زندگی کو بر پور مزے میں گزارنا چاہتے ہو۔ تو اس چیز سے پیسے کمانا سیکھوں جس میں آپ کو مزا آتا ہے۔ اس طریقے سے آپ کو اپنا کام کرنا بوجھ نہیں لگے گا۔ اور آپ اپنا پورا دن انجوئے کر پاؤں گے۔


اگر آپ ایک ٹیم بنا سکتے ہو۔ تو اس طریقے سے آپ جلد کامیابی حاصل کر سکتے ہو۔ 

0 Comments: