Gilay Shikway - Best Urdu Quotes by Seekhly




اگر ہمیشہ اپنے سے اوپر والے انسانوں کو دیکھو گے تو کبھی خوشی نہیں پاؤ گے۔
اور اگر اپنے سے نیچے والے انسانوں کو دیکھو گے تو زندگی کو کبھی غمگین نہیں پاؤ گے۔


تقدیر اس چیز کا نام ہے جو انسان کو اس مقام پر لا کھڑا کرتی ہے جہاں انسان جانا پسند نہیں کرتا۔ اور اس چیز کا سامنا کروا دیتی ہے جس کا کبھی وہ سامنا کرنا نہیں چاہتا۔


جیسے جیسے بچپن سے جوانی کی طرف عمر برتی جاتی ہے ہماری مسکراہٹ بھی ہمارے بچپن کی طرح کہیں دفن ہو جاتی ہے۔


زندگی میں جب کبھی کوئی ٹھوکر لگے تو اپنے دل کا حال اپنے دل میں دفنا دیا کرو۔ کسی دوسرے کو کبھی دل کا حال مت بتانا یہ دنیا ہے۔ جو تماشا بنانے میں ذرا بھی دیر نہیں کرتی۔


یہ دنیا کبھی بھی سچ بولنے والے انسان کی نہیں بن سکتی اگر آپ نے اس دنیا میں عزت اور شہرت حاصل کرنی ہے تو آپ کو میٹھے جھوٹ بولنا سیکھنے ہونگے ورنہ آپ کی سچائی آہستہ آہستہ آپ سے سب لوگ دور کردے گی۔


کچھ لوگ ہماری مدد کرتے ہوئے نظر آتے ہیں۔ لیکن وہ مدد نہیں بلکہ مدد کا دکھاوا کرتے ہیں۔ صرف اپنی شہرت اور عزت حاصل کرنے کے لیے۔ یہی وجہ ہے کہ جو وعدے وہ کرتے ہیں ان کو پورا نہیں کر پاتے۔


کسی اپنے کی جدائی میں دوسروں کو تسلی دینا تو بہت آسان ہے۔ لیکن جب ہم سے ہمارے اپنے جدا ہوتے ہیں۔ تب صبر کرنا مشکل نہیں بلکہ محال ہوجاتا ہے۔


غریب انسان کی اوقات کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ آج کل اگر کسی امیر کا اخلاق اچھا ہے تو ان امیر لوگوں کے اخلاق کی قدر کی جاتی ہے اور انہی کی تعریف کی جاتی ہے۔ جبکہ غریب انسان جتنی مرضی عزت اور اخلاق سے بات کرے۔ اس کو ہمیشہ نظر انداز کر دیا جاتا ہے۔


ایک غریب انسان چاہے جتنی مرضی پیار اور اخلاق سے بات کرے دوسرے انسان اس کو اس کی مجبوری ہی سمجھے گا اور اس کے اخلاق کا غلط فائدہ اٹھائے گا۔


کسی کا کچھ بگر نہیں جائے گا اگر اچھے انسان کے ساتھ بھی عزت اور پیار سے بات کیجئے۔ اور ایک بورے انسان کے ساتھ بھی --- ہاں ایسا کرنے سے آپ کی دنیا اور آخرت دونوں بن جائیں گی۔


دنیا میں آج انسان کی سوچ کا یہ عالم ہے۔ کہ اگر انسان کو اس کے منہ پر اس کی سچائی بتائی جائے تو اسے قبول کرنے کی بجائے اسے بدتمیز کہا جاتا ہے۔


دوستو اس دنیا میں اکیلے چلنا سیکھ لو۔ کسی سے مشورہ مانگو گے تو مفت میں مل جائے گا۔ لیکن اگر کسی سے مدد مانگو گے۔ تو مدد مانگنے پر پچھتاؤ گے۔ آج مدد کے نام پر بھی دھوکے دیئے جاتے ہیں۔ آج اپنے ہمدرد بھی ہمیں درد دے جاتے ہیں۔


کامیابی اسے ملتی ہے جو محنت کرتا ہے۔ اور جو محنت کرتا ہے اس سے غلطیاں بھی ہو سکتی ہیں۔ دوستو اس دنیا میں وہ لوگ نکمے ہیں۔ جو اپنی نہیں بلکہ دوسروں کی غلطیاں نکالتے ہیں۔



اپنا راز اگر اپنوں کو بتاؤ گے۔ تو وہ راز تمہارے غیروں تک پہنچ جائے گا۔


اگر آپ کو کوئی آپ کی قدر کرنے والا مل جائے۔ تو اس کی قدر کرنا۔ آج قدد کرنے والے تلاش کرنے سے بھی نہیں ملتے۔ اور استعمال کرنے والے خود آپ کو تلاش کر جاتے ہیں۔  


دوستو۔ جس انسان میں کوئی احساس نام کی چیز نہ ہو۔ اس کے سامنے گلے شکوے نہیں کیے جاتے۔

0 Comments: