کامیابی کے 3 راز اور سبق







آج 2018 کا سال ختم ہوچکا ہے. دنیا کے ایک امیر آدمی نے اپنی کتاب میں لکھا ہے کہ ہم ہر انسان سے کچھ نہ کچھ اچھا ضرور سیکھ سکتے ہیں.
اگر ہم دیکھیں تو ہر انسان میں کوئی نہ کوئی کمی ضرور ہوتی ہے یا کوئی نہ کوئی غلط کام ضرور کرتا ہیں۔
لیکن اس کے ساتھ کہیں نہ کہیں وہ اپنی کمپنی میں یا اپنی زندگی میں کچھ نہ کچھ صحیح بھی کر رہے ہوتے ہیں اور ہم ان کی اسی چیز سے کچھ نہ کچھ اچھا سیکھ سکتے ہے  جس سے ہم اپنی زندگی میں بہت جلد اور تیزی سے آگے بڑھ سکتے ہیں۔
تو اسی بات پر عمل کرتے ہوئے 2018 میں جو میں نے صحیح باتیں سیکھی ہیں۔ کتابوں سے، کمپنیوں سے اور کچھ لوگوں سے جس میں اس دنیا کے سب سے امیر لوگ بھی شامل ہیں۔ تو ان لوگوں سے سیکھی ہوئی باتوں سے میں ٹاپ تین باتیں جو میں نے پچھلے سال سیکھی ہیں وہی آپ کے ساتھ شیئر کروں گا۔


نمبر ون گیم کھیلنا

اس سال پبجی گیم نے تو کمال کر دیا یعنی ایک چھوٹے پانچ سال  کے بچے سے لے کر ایک بوڑھے ادمی تک میں نے سب لوگوں کو یہ گیم کھیلتے ہوئے دیکھا ہے راستے میں چلتے ہوئے یا بیٹھے کھانا کھاتے ہوئے کہیں نہ کہیں کوئی انسان ایسا مل ہی جاتا ہے۔ اس گیم کو کھیلتے ہوئے۔

خیر یہ تو ہوئی گیم کھیلنے والوں کی باتیں۔


اب جو سبق میں نے اس سے سیکھا ہے۔ وہ یہ ہے کہ ہمیں گیم کھیلنے والے کی بجائے گیم بنانے والا بننا چاہیے۔ تو اب بات کرتے ہیں گیم بنانے والے کی۔

پبجی گیم آج کے ٹائم میں ایک فیمس گیم ہے۔ 2018کی رپورٹ کے مطابق ایک دن میں ملین اف لوگ اسے کھیلتے ہیں۔ اس میں اسی کون سی خاص بات ہے کہ لوگ اس کو اتنا پسند کرتے ہیں وہ بھی میں آپ کو بتاؤں گا آپ اس ویڈیو کو دیکھتے جائیں۔

اس گیم کو جو بنانے والا شخص جس کا نام ہے برینڈن گرین آج کے ٹائم میں اس کی کمائی فائیو بلین ڈالر ہو گئی ہے۔ یہ سب بتانے سے میرا مقصد کیا ہے میرا مقصد صرف آپ کو انسپائر کرنا ہے تاکہ آپ میں سے ایٹ لیسٹ کوئی انسان تو اس سے اچھی گیم بنائے گا۔

اب یہ گیم اتنا فیمس کیوں ہوا میں آپ کو اس کے کچھ پرنسپل بتاؤں گا جو آپ کو اسی طرح کے فیمس گیم اور پروڈکٹ بنانے میں مدد کریں گے جس کے لوگ عادی ہو جائیں۔
اور آپ گیم کے علاوہ کوئی بھی اور پروڈکٹ بنا کے اور  ان کو بیچ کر امیر بن سکتے ہو۔


اس گیم کی خاصیت

اس گیم کی خاصیت ہے کہ یہ سوشل میڈیا پلیٹ فارم کی طرح ہک ماڈل کا استعمال کرتا ہے۔ جس طرح فیس بک اور یوٹیوب کرتے ہیں۔ جس کی وجہ سے لوگ اس کے عادی بن جاتے ہیں۔
انسانوں کی ایک عادت ہوتی ہے کہ وہ 40 پرسنٹ سے زیادہ جو چیزیں ہر روز کرتے ہیں وہ سوچ سمجھ کے نہیں کرتے۔ بلکہ صرف اسی وجہ سے کرتے ہیں کیونکہ وہ ان چیزوں کے عادی بن جاتی ہے۔

اس لئے اگر آپ کو بھی  انٹرنیٹ کے دور میں کامیاب ہونا ہے۔ وہ بھی جلدی سے۔ تو آپ کو بھی کوئی ایسی پروڈکٹ بنانی ہوگی جو لوگوں کی عادت بن جائیں۔
تو آپ یہ سب کر سکتے ہیں ھک ماڈل کا استعمال کرکے اس کے چار سٹیپ ہیں جو کہ میں آپ کو شوڑٹ کر کے بتانے والا ہو۔

انسان کو کسی بھی چیز کا عادی بنانے کے لئے سب سے پہلا سٹیپ ہوتا ہے ٹریگر۔ اس میں انسان کو دو طریقوں سے کسی چیز کا عادی بنا سکتے ہیں پہلا انٹرنل اور دوسرا ایکسٹرنل طریقہ۔
اگر میں آپ کو آسان طریقے سے بتاو تو انٹرنل طریقہ میں خودی کسی پروڈکٹ کی یاد آتی ہے جیسا کہ انسان بور ہوتا ہے تو کسی گیم کا یاد آنا۔
اور دوسرا ایکسٹرنل طریقہ یعنی ایڈورٹائزمنٹ کے ذریعے کسی چیز کی یاد کرانا۔


کیسی چیز کو فیمس کرنے کے لیے سٹیپ نمبر ٹو- مختلف انعام

اگر میں آپ کو کوئی بہت آسان کام کرنے کو بولوجس کو کرنے کے بعد میں آپ کو ایک انعام دو۔ وہ انعام ہے چاکلیٹ۔ تو شاید میرا یہ کام آپ ایک دفعہ کریں دو دفعہ کریں یا پھر تین دفعہ کریں گے۔-- آخر بور ہونے کے بعد آپ میرا یہ کام نہیں کریں گے۔ لیکن جیسے ہی میں آپ کو اس کام کرنے کے بعد کبھی چاکلیٹ کبھی دوسرا انعام اور کبھی پیسے دوں۔ مطلب کام ختم کرنے کے بعد میں آپ کو ہر بار کوئی مختلف انعام دوں۔ تو آپ میرا یہ کام بار بار کریں گے۔ صرف اس مختلف انعام کی وجہ سے۔


نمبر3 مارکیٹنگ

آج سے پہلے آپ کو مارکیٹنگ کرنے کے لئے ایک اچھے کیمرے اور مائیک وغیرہ کی ضرورت ہوتی تھی یا پھر آپ کو مارکیٹ کرنے کے لئے اچھے خاصے پیسے دینے پڑتے ہیں۔ لیکن آج ٹک ٹوک موبائل ایپ وجہ سے آپ فری میں مارکیٹنگ کر سکتے ہیں۔

میں اسی طرح کی مزید ویڈیو بناتا رہوگا۔ جن کو دیکھنے کے لیے آپ اس چینل کو سبسکرائب کرسکتے ہے۔ اور اپنی زندگی میں کچھ نیا سیکھ سکتے ہیں۔ اگر آپ کو ویڈیو اچھی لگی تو لائیک کو کومینٹ ضرور کریں۔  

0 Comments:

Best Shayari For Friends in Urdu - Love Poetry


ایک خوبصورت غزل یاروں کے لیے


Please include attribution to seekhly.com with this graphic.

shayari for friends

Share this Image On Your Site

2 Comments:

دوستی پر ایک خوبصورت غزل | Beautiful Ghazal For Friends In Urdu

      دوستی پر ایک خوبصورت غزل
اگرآپ نے اپنی زندگی گی کو اصل میں جینا ہے تو سچی دوستی کرولو۔
زندگی کا اصل مطلب حاصل کرنا ہے تو سچی دوستوں کر لو۔
 چلو ہم سب دوستی کر لے- ایک سچی دوستی
دوستی میں ہی زندگی کی خوشی ہے۔ زندگی کو سمجھنا ہے تو دوستی کرلو۔



Please include attribution to www.seekhly.com with this graphic.

Friendship Poetry

Share this Image On Your Site






0 Comments:

How To Start a Business Review in Urdu | خود کا بزنس کیسے شروع کریں




اگر آپ اپنا بزنس شروع کرنا چاہتا ہیں اور ابھی تک آپ کو کوئی اچھی ویڈیو نہیں ملی جو کہ آپ کی مدد کر سکیں تو آپ اس ویڈیو کو ضرور دیکھیں۔
ابھی کچھ دنوں پہلے سیکین چینل نے ایک ویڈیواپ لوڈ کی ہے اس میں بہت اچھے طریقے سے ہر چیز کو ڈیٹیل میں بتایا گیا ہے ہے۔ کہ آپ کن کن طریقوں سے اپنا خود کا ایک مائیکرو بزنس شروع کر سکتے ہیں۔ اس ویڈیو نے میری تو کافی ہیلپ کی ہے۔ 
میں آپ کو اس ویڈیو کا سب سے اچھا پارٹ بتانے والا ہو۔ جو اس ویڈیو میں بتایا ہے۔ کہ آپ کو خود کا بزنس شروع کرنے کے لیے کن چیزوں کی ضرورت ہے۔

سیکین چینل کی یہ ویڈیو چھ طرح کے لوگوں کی کے لئے بہت یوزفل ہے۔
نمبر ون جن لوگوں نے اپنا بزنس شروع کرنا ہے
نمبر2 جن لوگوں کے پاس انویسٹمنٹ کے لیے زیادہ پیسے نہیں ہیں
نمبر3 جو لوگ خود کی پسند کا کام کرنا چاہتے ہیں
نمبر فور جو لوگ سلانہ لاکھوں کمانا چاہتے ہیں
نمبر 5 آپ اکیلے ہی سب کام کرنا چاہتے ہیں
نمبر 6 جن لوگوں آپ کے پاس کوئی ہنر نہیں ہے تو آپ یہ ویڈیو لازمی دیکھیں-

سکن چینل کی اس ویڈیو میں جس کتاب کی سمری بتائی گئی ہیں اس کے اتھرنے 100 سے زائد لوگوں کا انٹرویو کیا ہے جو ان نمبر 6 میں سے 4 کنڈیشن کو پورا کرتے تھے اور ان لوگوں نے اپنے آپ کو کامیاب کر کے دکھایا ہے۔
 یعنی ان سب نے پیسہ، ہنر، اور خود کی ٹیم کے بغیرہی خود کو کامیاب کیا۔


سیکین چینل کی اس ویڈو میں بتایا گیا ہے۔ کہ آپ کو خود کا بزنس شروع کرنے کے لئے تین چیزوں کی ضرورت ہوتی ہے۔

نمبر1 پروڈکٹ یا سروس جو آپ نے بیچنی ہے۔
نمبر2 کچھ ایسے لوگ جو کہ آپ کی پروڈکٹ یا سروس کو خریدنے کے لئے ریڈی ہو۔
اور نمر3 ایک ایسا طریقہ جس کے زریعے آپ آسانی سے پیسوں کا لین دین کر سکتے ہو۔
بس آپ نے یہ تین چیزوں کو ایک ساتھ اکٹھا کرنا ہے تو آپ ایک اچھے بزنس مین بن جاؤ گے۔

آج کا دور انٹرنیٹ کا ہے اس سے پہلے آپ کو کسٹمر تلاش کرنے کے لئے اپنی پروڈکٹ تلاش کرنے کے لئے پیسے خرچ کرنے پڑھتے تھے جب کہ آج آپ یہ سب آج گھر بیٹھے آسانی سے اپنے لیپ ٹاپ پر اور انٹرنیٹ کے ذریعے تلاش کرسکتے ہیں۔ اور اپنا خود کا ایک مائیکروبز بزنس شروع کرسکتے ہیں۔
جیسے کہ اگر آپ ایک اچھے بلاگر یا یو ٹیوبر بن جاتے ہو تو آپ دنیا کے کسی بھی ملک میں اپنا کام کرسکتے ہوں صرف آپ کو ایک لیپ ٹاپ اور انٹرنیٹ کی ضرورت ہے۔

اس ویڈیو میں ایک اور بہت کام کی بات بتائی گئی ہے۔ کہ آپ کا پیشن بہت کچھ ہو سکتا ہے۔ جیسے کے آئسکریم کھانا۔ گھومنا پھرنا اور بہت کچھ۔ لیکن آپ اپنے اس پیشن سے پیسہ نہیں کما سکتے۔ جب تک یہ لوگوں کو فائدہ نہیں دیتا۔ اگر آپ کو پیسہ کمانا ہے۔ تو آپ کو وہ کام کرنا ہوگا جو لوگوں کو فائدہ دے۔

اگر آپ سیکن چینل کی مکمل ویڈیو دیکھنا چاہتے ہے۔ تو میں نے لنک نیچے شیئر کیا ہے۔ آپ مکمل ویڈیو دیکھ سکتے ہیں۔ لیکن جو اس ویڈیو کا بیسٹ پارٹ تھا جس سے میری ہیلپ ہوئی ہے۔ اور مجھے امید ھے اس سے آپ کی بھی مدد ہوگی۔ 




0 Comments:

Top 9 Pictures Whatsapp Status In Urdu










































1 Comments:

12 Best Urdu Sad Poetry Image | اردو شاعری














0 Comments:

دنیا کا کامیاب بچہ | Kids Moral Stories

حمزہ چھوٹی عمر کا اور سمجھدار لڑکا تھا- جس کے والد کا بچپن میں انتقال ہو گیا تھا- اس کی ‏ امی لوگوں کے گھروں میں کام کیا کرتی تھی- تاکہ اس کا بیٹا ایک کامیاب آدمی بن سکے۔
اسی لئے وہ محنت کرکے اپنے بیٹے کو تعلیم دینا چاہتی تھی۔

لیکن آج حمزہ کچھ پریشان تھا۔ کیونکہ اسکی چھوٹی بہن کی سالگرہ تھی۔ وہ جانتا تھا کہ بہن آج مٹھائی اور کھلونے مانگے گی۔ لیکن ہمارے پاس اتنے پیسے نہیں ہیں۔ کہ میں اپنی بہن کی اس خواہشات کو پورا کر سکوں۔ حمزہ پریشان تھا۔ کہ وہ پیسے کہاں سے لائے۔


حمزہ خاموشی کی حالت میں کھڑا ہوا اور باہر چلا گیا۔ اچانک اس نے ایک ارادہ کیا۔ وہ سیدھا مزدور لوگوں کے کام کرنے کی جگہ پر گیا اور کسی آدمی سے کہا آپ کے پاس کوئی کام ہے۔  تو مجھے کام کرنا ہے۔ آدمی کے دل میں ترس آیا اس نے حمزہ کو کمرے کی صفائی کا کام دیا۔ اس نے سارا دن صفائی کی اور شام تک اپنی بہن کے لئے 200روپے کما لیئے۔ ان پیسوں سے اس نے اپنی بہن کے لئے کپڑے اور کھلونے خریدیں۔ حمزہ بہت خوش تھا۔ اس نے گھر جاتے ہیں اپنی بہن کو آواز دی۔ اسے گلے لگایا اور سارے تحفے سے دے دیے۔


جب ماں کو پتہ چلا کہ میرے بیٹے نے مزدوری کی ہے۔ تو پہلے اس کی آنکھوں میں آنسو آگئے پھر کہا کہ بیٹا مجھے تم پر فخر ہے تم ایک دن ضرور کامیاب آدمی بنو گے۔

0 Comments:

کامیاب ترین انسانوں کی کہانی



جب بھی ہم اپنی زندگی میں کچھ بڑا کرنے کی کوشش کرتے ہیں تو ہمیں ہزار پریشانیاں نظر آتی ہیں۔
اور ان پریشانیاں کے ڈر سے ہم کوئی بڑا کام نہیں کر پاتے۔
زندگی میں جو بھی انسان برا بنا ہے وہ ان پریشانیوں کا سامنا کرنے کے بعد ہی بنا ہے۔ مقابلہ کرنے کے بعد ہی بنا ہے محنت کرنے کے بعد ہی بنا ہے کبھی نہ ہار ماننے والے کے جذبے کے بعد ہی بنا ہے۔
آج میں آپ کے ساتھ کچھ ایسے ہی لوگوں کی سٹوری شیئر کروں گا۔
جو اپنے بچپن سے ہی غریب تھے۔ کبھی رینٹ کے مکان پر رہتے تھے اور کبھی سڑک پر۔
لیکن انہوں نے ہار نہیں مانی۔
انہوں نے بار بار کوشش کی۔
اور آخر میں وہ کامیاب ہو گئے۔


چلیں شروع کرتے ہیں۔ ایڈیسن سے۔

اس کی زندگی بھی نقصان اور ناکامیوں سے بڑی پری تھی۔ یہ سب جانتے ہیں۔ کہ اس نے ایک ہزار بار کوشش کی پھر جا کر بلب بنا۔
کسی نے پوچھا جب آپ ایک ہزار بار نکام ہوئے۔ تب آپ کو کیسا لگا۔ اس نے کہا بلب بنا ایک ایسی چیز تھی۔ جس کو بنانے کے لیے ایک ہزار بار تجربہ کرنا تھا فیل ہونا تھا کوشش کرنی تھی۔
اس نے ہمیں موٹیویٹ کرنے کے لئے ایک اور بات کی۔ اس نے کہا آپ کوشش کریں۔ چاہے ناکام ہو جائیں۔ ایک بار پھر کوشش کریں۔ بار بار کوشش کریں۔ کیونکہ اسی سے کامیابی کا راستہ نکلتا ہے۔
جو لوگ ناکامی کو خوشی سے گلے لگاتے ہیں۔ وہی لوگ عظیم کامیابی حاصل کرتے ہیں۔ اور یہی لوگ کامیابی کے حقدار ہیں۔
ہار مان لینا۔یہ ہماری سب سے بڑی کمزوری ہے۔ کامیابی کا ایک ہی طریقہ ہے۔ کہ بار بار کوشش کی جائے۔ 

دنیا کا سب سے بڑا سائنسدان آئن سٹائن۔
جب پیدا ہوا تو چار سال کی عمر تک کوئی الفاظ نھیں بول سکا۔ سات سال تک پڑھائی نہیں کرسکا۔ سکول والوں نے اسے یہ کہہ کر نکال دیا کہ تم خوابوں کی دنیا میں رہنے والے بچے ہو۔
اب اس کے پاس دو راستے تھے یا تو زندگی سے مایوس ہو جاتا اور گمنامی کی زندگی گزارتا لیکن اس نے کوشش کی، جدوجہد کی، محنت کی اور دنیا کا سب سے بڑا سائنسدان بنا۔

 جیک ماں
کون نہیں جانتا یہ علی بابا کا فاؤنڈر ہے۔ اور ان کا نام دنیا کے کامیاب انسانوں میں شامل ہے۔ لیکن کیا آپ کو ان کی پوری کہانی پتا ہے۔ انہوں نے اپنی کرئیر کی شروعات میں تیس سے زیادہ انٹرویو دیا جن سب میں وہ فیل ہوئے۔
یہ تو ان کی بڑی پریشانیوں میں سے ایک تھی جس کے بعد بھی انہوں نے ہار نہیں مانی اور  آج علی بابا کے فاؤنڈر بنا۔


اب تک جتنے بھی لوگ کامیاب ہوئے ہیں۔ اگر میں ان کی کامیابی کی وجہ صرف ایک لائن میں بتاو۔ انسان کے لئے ہر کام ناممکن ہے۔ جب تک وہ اسے پورا نہیں کرلیتا۔ لوگ آپ کو کہیں گے کہ آپ یہ کام نہیں کر سکتے۔ لیکن جب آپ وہ کام کر لیتے ہو تو وہی لوگ آپ سے پوچھیں گے۔ کہ آپ نے یہ کام کیسے کیا۔

0 Comments:

کامیابی کے لئے سب سے اہم چیز



کئی بار ہمیں لگتا ہے۔ کہ سب کچھ ختم ہوگیا ہے۔
جب کوئی ریلیشن شیب ٹوٹی ہے۔ یا پھر کچھ ایسا ہو جاتا ہے۔ جس کی امید بھی نہیں کرتے۔

جیسے ایک بہت اچھا دوست ہے۔ جس سے پوری امید ہے کہ وہ کبھی آپ کو دھوکا نہیں دے گا۔ لیکن ایک دم سے سب کچھ خراب ہوجاتا ہے۔ یہ دوست کوئی بھی ہوسکتا ہے، آپ کی مددر، آپ کے فادر، آپ کی وائف یا کوئی بھی۔ جس پر آپ کو پورا عتماد ہو۔ لیکن پھر بھی وہ آپ کی زندگی تباہ کر جاتا ہے۔

یہ سب زندگی میں کسی نا کسی کے ساتھ ہوتا ہے۔ تقریبن ہم سب کے ساتھ ایسا ہوتا ہے۔ لائف میں کہی نا کہی ہمیں اس طرح کا نقصان ضرور ہوتا ہے۔

یا پھر کوئی آپ کی ایسی جگہ پر انسلٹ کر جاتا ہے۔ کہ آپ برداشت نہیں کرسکتے۔

تو اس حالت جب کوئی آپ کوئی آپ کی انسلٹ کرتا ہے۔ کوئی آپ کو دھوکا ریتا ہے۔ 
تو آپ کیسے خود کو سمبالیں گے۔ 

یہی بات میں آپ کو بتانے والا ہو اس ویڈیو میں۔ 

ایک بات میں آپ کو بتاں دو کہ ہم سب کے ساتھ کبھی نا کبھی ایسا ہوتا ہے۔

یوٹیوبر، بسنس مین۔ جتنے بھی کامیاب لوگ ہیں۔ اب تک جتنے بھی لوگوں نے اپنی زندگی میں کچھ کیا۔ ان سب میں ایک بات کومن ہے۔ جو آپ بھی مانے گے۔ کہ وہ سب گریب خاندان سے تھے۔ انھوں نے مشکلات دیکھی ہیں۔ بہت بھری بھری پریشانیاں دیکھی ہیں۔

 یہ پریشانیاں ان کے دماغ کو اتنا مضبوط بنا دیتی ہیں۔ ان کے سامنے جیسی بھی  پرابلم ہو۔ اس کو حل کرنا ان کی عادت بن جاتی ہے۔

ہم لوگوں کی زندگی میں کوئی نہ کوئی پرابلم ضرور ہوتی ہے۔ جیسے میرے گھر والے میری سٹڈی کی زماداری نہیں اٹھا سکتے۔ تو اب میرے پاس دو راستے ہیں۔ یا تو میں اس کو پریشانی سمجھو یا اپپرچونٹی۔ کہ میں ابھی سے جاب کرسکتا ہو۔

جسی سے پیسے کمانے کی سمجھ بھر جائے گی۔ تاکہ وقت سے پہلے ایکسپریئنس حاصل کرسکوں۔ دوسروں کو جاب دے سکوں۔

میں آپ کو موٹیویشن کے لیے ایک مثال دیتا ہو۔
جب آپ کوئی گیم کھیلتے ہیں۔ تو آپ کو بڑے سے سے بڑا چیلنج ایکسیپٹ  کرنے میں مزا آتا ہے۔ اس میں آپ ہر طرح کا رسک لینے کے لیے تیار رہتے ہو۔

آپ کوئی نہ کوئی طریقے سے اینڈ تک کھیلنے کی کوشیش کرتے ہو۔ آپ فیل ہوتے ہو۔ لیکن پھر بھی بار بار کوشیش کرتے ہو۔

گیم کو پورا کرنے کے لیے۔ گھر والوں کی مار برداشت کرتے ہیں۔ کئی گھینٹوں اپنی اپنی باری کا انتظار کرتے ہو۔ بار بار فیل ہوتے ہو۔ لیکن ہار نہیں مانتے۔


0 Comments:

ایک دن آئے گا جو آپ کی زندگی بدل دے گا




آپ کی زندگی میں ایک ایسا دن ضرور آئے گا۔ جو آپ کی زندگی بدل دے گا۔ یہ دن میری زندگی میں بھی آیا تھا۔
اور اسی دن آپ کو دو راستے ملیں گے۔ یہ آپ پر ہے کے آپ کس راستے کا انتخاب کرتے ہیں۔
آپ سب لوگوں کی طرح میرے ماں باپ بھی یہی چاہتے تھے۔


 کہ کوئی اچھی سی سرکاری نوکری تلاش کرو۔
لیکن میرے دماغ میں کیا ہے- میں کیا کرنا چاہتا ہو۔ وہ نہیں جانتے تھے۔ آپ لوگوں کی طرح میں نے بھی بہت طعنے سنے ہیں۔
اور آخری الفاظ تم کچھ نہیں کر سکتے۔ تم بڑے ہو کر کیا کرو گے۔ 
اگر میں سچ بتاؤ تو میں نے کچھ الگ کرنے کا سوچا تھا۔ موٹیویشن سپیکر بننے کا سوچا تھا۔ لیکن کیسے بنوں یہ نہیں پتا تھا۔ یہ سب سوچ کر۔ میری نیند اڑ جاتی تھی۔ کیونکہ میں وہ کرنا چاہتا تھا۔ جس سے میرے گھر والے منع کرتے تھے۔
آخر میں نے وہ کام شروع کردیا۔ میں نے یوٹیوب پر ویڈیو بنانا شروع کردیا۔ میں صحیح کر رہا ہوں یا غلط یہ مجھے نہیں پتہ۔ مجھے اس میں کامیابی ملتی ہے یا نہیں یہ بھی نہیں پتا۔
لیکن ایسا کرنے سے مجھے ان سوالوں کا جواب ضرور مل جائے گا۔ کہ میں صحی ہو یا غلط اور آخر مجھے ان کا جواب مل ہی گیا۔ ان سوالوں کا جواب جو میں خود سے کرتا تھا۔
کہ آخر کیوں میں وہ نہیں کرسکتا جو میں چاہتا ہو؟
آخر کیوں میں اپنی مرضی نہیں کرسکتا؟
کیوں ہم اپنے مقصد کو پورا نہیں کر پاتے؟

آپ یہ ویڈیو دیکھیں آپکو ان سوالوں کا جواب مل جائے گا۔
ہم سب اپنی زندگی میں کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ کچھ بننا چاہتے ہیں۔ 

لیکن پتہ ہے کس طرح۔۔۔۔۔ سہارے کے ساتھکسی کی مدد لے کر۔

یاد رکھیں دوستو۔ کوئی آپ کی مدد نہیں کرے گا۔ اور اس طرح کی سوچ ہمیں کمزور کرتی ہے۔ انسان سہارے سے نہیں۔ خود کی محنت سے کچھ کرتا ہے۔
کامیابی کوشش کرنے سے ملتی ہے۔ رسک لینے سے ملتی ہے۔ خود کو بدلنے سے ملتی ہے۔
 اور یہاں پر لوگ ہمیں ہر طرح کی باتیں کریں گے۔
ہو سکتا ہے کہ کچھ لوگ ان کی باتوں سے ڈر جائیں اور ان لوگوں کی باتوں میں آ جائے کہ شاید یہ سبھی لوگ سچ کہہ رہے ہیں۔
اور رسک لینا چھوڑدیں۔ اپنے آپ کو بدلنا چھوڑ دیں۔
ہمیں زندگی میں ایسے بہت سارے لوگ ملیں گے۔ جو کہیں گے کہ ہم کامیاب نہیں ہو سکتے۔ جن لوگوں نے اپنی زندگی میں کچھ نہیں کیا۔ وہ ہمیں باتیں سنائیں گے۔
یہ بات ہم سب لوگ جانتے ہیں کہ لوگوں کا کام ہے باتیں کرنا اور اگر ہم نے کامیاب ہونا ہے۔ تو ہمارا کام ہے کوشش کرنا۔
تب تک کوشش کرنا جب تک اس کام کو پورا نہیں کر لیتے۔


0 Comments: