جو شخص نکامی کا مقابلہ نہیں کر سکتا- وہ کبھی کامیابی نہیں پا سکتا

جو شخص نکامی کا مقابلہ نہیں کر سکتا- وہ کبھی کامیابی نہیں پا سکتا۔



اچھے دوست بڑے وقت کو بھی اچھا بنادیتے ہیں۔


کوئی تب تک نہیں جیت سکتا جب تک وہ اپنے ڈر کو نہ ہرا لے۔



اگر آپ سے کوئی کہتا ہے کہ تم یہ نہیں کرسکتے۔ تو وہ اپنے سوچنے کی حد بتاتا ہے۔ آپ کے نہیں۔ آپ خود پر بھروسہ رکھے۔


اس وقت کام کرو۔ جب لوگ سوتے ہیں۔
اس وقت کچھ نیا سیکھوں۔ جب لوگ کھیلتے ہیں۔
اس طرح زندگی جینا سیکھوں جیسے لوگ سوچتے ہیں۔



اگر آپ پریشانی کا مقابلہ نہیں کرسکتے۔ تو کامیابی حاصل نہیں کرپائیں گے


اگر آپ آپنی زندگی بدلنا چاہتے ہیں۔ تو اسے بدلنے کی کوشیش کریں۔ یا بھر اپنی اس سوچ کو۔




اگر آپ سوچتے ہو کہ کوئی برا کام کرسکتے ہو۔ تو آپ ادھا کام کر چکے ہو۔



خود پر اعتماد کرنا سیکھیں۔ کبھی دوکھا نہیں کھائیں گے۔



اگر آپ ایک چیز کو کرنے میں بہت زیادہ وقت لگاتے ہیں۔ تو آپ اسے کبھی پورا نہیں کر پاؤں گے۔



آگر آپ کو خود پر یقین ہے۔ تو آپ کو کوئی نہیں روک سکتاتا۔

1 comment: