کبھی نہ ہار ماننے والی عادت

خود کو کمزور مت سمجھے۔ آپ اکیلے بھی بہت کچھ کرسکتے۔ اکثر لوگ شکایت کرتے ہیں۔ کہ گھر والوں نے میری مدد نہیں کی۔

اگر آپ کو اپنے گھر والوں سے شکایت ہے تو اس بات یاد رکھیں کہ یہ آپ کے سپنے ہیں۔ آپ نے کود ان کو پورا کرنا ہے۔ اور خود ہی ان کو انجوئےبھی کرنا ہے۔اگر
آپ کے گھر والے آپ کو کسی کام سے روکتے ہیں تو پھر ایک بار یہ بھی سوچوں کے بچپن میں کتنے اسے کام تھے جن سے بھی گھر والے روکتے تھے لیکن آپ نے پھر بھی گھر والوں کے خلاف جا کر کیئے۔
اب اگر اپنے کریئر کے لیے کچھ اچھا کرنا چاہتے ہو۔ تو پھر گھر والوں سے کیوں ڈر رہے ہو۔ کہی نکامی سے تو نہیں ڈر ہے کہ اگر نکام ہو گیا۔ تو پھر کیا کروں گا۔

اگر آپ اسی ہی حالت میں ہے۔ تو اس کی صرف ایک وجہ ہے۔۔۔۔ صرف ایک

وہ یہ کہ آپ کو خود پر یقین نہیں ہے۔
اگر کوئی آپ کی مدد نہیں کرتا۔ تو فکر مت کریں۔ آپ کو کیسی سے بھی مدد لینے کی ضرورت نہیں ہے۔ ایسے بہت سے لوگ ہیں۔ جن کے پاس کھانے کے لیے پیسے نہیں تھے۔ لیکن ان لوگوں نے صفر سے اپنا کامیابی کا سفر شروع کیا۔ اور کچھ پاس نہ ہوتے ہوئے بھی کامیابی کو اپنی زندگی کا حصہ بنیا۔

البرٹ آئن اسٹائن سکول میں سب سے بوقوف لڑکا سمجھا جاتا تھا۔ اس سے کوئی بات کرنا پسند نہیں کرتا تھا۔ لیکن اب اسے کون نہیں جانتا۔ پوری دنیا میں اس کا نام ہے۔ آخر ان لوگوں میں کوئی تو بات تھی۔
اور بات صرف ایک تھی خود پر اعتماد۔ اور دوسری کبھی نہ ہار ماننے والی۔

0 Comments: