زندگی ہمیشہ بدلتی ہے


زندگی ہمیشہ بدلتی ہے اور آپ کو بھی اس کے ساتھ بدلتے رہنا چاہیے۔












0 Comments:

زندگی آسان بنائے- تیرا سیلف امپروومنٹ ٹپس



میں اپنی زندگی کو سمپل بنانے میں پیار کرتا ہوں اور ایسا کرنا ہی مجھے اور بہتر بناتا ہے اور کم دکھی بھی کرتا ہے۔

لیکن آپکو زندگی کی شروعات کہاں سے کرنی چاہیے۔ اگر آپ پہلے سے ہی آپنے راستے پر ہو تو کیا اس پر چلتے رہنا چاہیے۔

آج اس ویڈیو میں میں آپ کو بتانے والا ہوں سیلف امپروومنٹ ٹپس۔

اس میں جتنی بھی ٹیپس میں آپ کو بتانے والا ہوں ان میں سے کسی بھی ایک کے ذریعے آپ اپنی زندگی کو اور اپنے آپ کو بہتر کر سکتے ہیں۔

نمبر1
زندگی ہمیشہ بدلتی ہے اور آپ کو بھی اس کے ساتھ بدلتے رہنا چاہیے جو کام آپ نہیں کرنا چاہتے اسکو چھوڑ دیں۔ اس کے بدلے وہ کام کرنے کی کوشش کریں جو آپ کو اچھا لگتا ہے۔ چاہے اس کے لئے تھوڑا ٹائم زیادہ لگے۔ ایسا کرنے سے آپ اپنی زندگی میں وہ کر پائیں گے جو آپ کرنا چاہتے ہیں۔ ایک ایسی زندگی بنا پائیں گے۔ جو آپ بنانا چاہتے ہیں۔ اس لئے کبھی بھی وہ کام نہیں کریں۔ جنہیں آپ کرنا نہیں چاہتے۔

نمبر2 
ایک وقت میں ایک کام کریں۔ ایسا کرنے سے آپکو ایک اچھا رزلٹ ملے گا اور اس سے آپ اچھا محسوس کریں گے۔اس طرح آپ زندگی کو اور بہتر طریقے سے جی پائیں گے
نمبر3
ہر اتوار کو کم سے کم دس سے پندرہ منٹ پورے ہفتے کی پلاننگ کرنے میں گزارے۔ اپنی ساری پلاننگ لکھیے اپنی ٹو-ڈو-لسٹ بنائے اس لسٹ کو دیکھ کر اس حساب سے اپنا پورا ہفتہ گزاریں جس سے آپ اپنے سارے کاموں کو بغیر کوئی ٹینشن کے ایک اچھے طریقے سے پورا کر پائیں گے۔

نمبر4
سبھی کھانے کی چیزیں اور شاپنگ ہفتے میں ایک ہی دن کریں۔ جس سے آپ اپنا ٹائم اور انرجی دونوں بچا سکتے ہیں۔

نمبر 5
جب بھی آپ پریشان ہو کوئی بھی پروبلم ہو یا پھر کوئی بھی رلیشن شپ کی وجہ سے آپ ٹینشن میں رہتے ہوں۔ تو پھر تھوری دیر آرام سے بیٹھیں اور دو منٹ کے لئے ایک لمبی سانس لے اور جو سانس آپ اندر اور باہر جا رہی ہے۔ اس پر غور کریں۔ ایسا کرنے سے آپ کی پوری بوڈی اور دماغ ریلیکس ہوجائے گا۔

نمبر 6
اپنی ساری چیزوں کو اور سارے کاموں کو مکمل کرنے کی پوری کوشش کریں اگر آپ کوشش کریں۔ تو اپنے سارے کاموں کو اچھے طریقے سے کر سکتے ہو۔ جب آپ جانتے ہو کہ آپ یہ سب کام اچھے طریقے سے کر سکتے ہو تو آپ کو ضرور کرنا چاہیے۔ جتنا ہو سکے اپنے کاموں کو آسان بنائیں اور آپ کا جو بھی کام ہے اس میں اپنا ہنڈریڈ پرسینٹ دینےکی کوشش کریں۔


نمبر7
دن میں ایک بار اپنے سارے کاموں کو چیک کریں۔ اپنے تمام سوشل اکاؤنٹس کو صرف ایک بار چیک کریں۔ اسے آپ کی انرجی اور ٹائم ان پر زیادہ ویسٹ نہیں ہوگا۔ اور آپ اپنے تمام کام کو ہنڈریڈ پرسینٹ دے سکیں گے۔


نمبر 8
روزانہ کوئی نہ کوئی ایک اچھا کام کرنے کی کوشش کریں۔ جس سے آپ کا دل اور بھی اچھا ہو جائے گا۔ آپ خود کے اندر ایک پوزیٹیویٹی محسوس کریں گے۔ جس سے آپ کا سارا دن اور بھی بہتر بن جائے گا۔


نمبر 9
جو چیزیں آپ کے پاس موجود ہیں انہی کی مدد سے آگے بڑھنے کی کوشش کریں۔


نمبر 10
روزانہ اپنے آپ سے ایک سوال پوچھیں۔ جس طرح وہ کون سی چیز ہے۔ جسے آپ اچھے طریقے سے کر سکتے ہیں اور ایسا کون سا کام ہے۔ جسے آپ اور بھی آسان بنا سکتے ہیں۔ اور ایسا کونسا اہم فیصلہ ہے۔ جو آج آپ نے کرنا ہے جس سے آپ کی زندگی اور بھی بہتر بن سکتی ہے۔


نمبر11
ایسے لوگوں کو فالو مت کریں۔ جن کو آپ پسند نہیں کرتے ایسے چینل کو سبسکرائب مت کریں جن کو آپ پسند نہیں کرتے۔ ایسی چیزیں جنہیں آپ پسند نہیں کرتے ان کے ساتھ جڑے رہنے سے آپ کی سوچ اور بھی بگڑ جائے گی اور آپ کا کسی کام میں دل نہیں لگ پائے گا۔


نمبر 12
جتنا ہو سکے اپنے کاموں کو سمپل اور آسان بنائیں۔ اس طریقے سے آپ کم وقت میں زیادہ ترقی کر پائیں گے۔


نمبر13
سب کو خوش کرنا چھوڑ دیں ہماری زندگی میں کچھ ایسے لوگ ہوتے ہیں۔ جو ہمیں اس کام سے روکتے ہیں۔ جو ہم کرنا چاہتے ہیں۔ تو ان کو ساتھ لے کر ہم آگے نہیں بڑھ سکتے کیونکہ آپ نے خود کو سپورٹ کرنا ہے۔ خود کے سپنے پورے کرنے ہیں۔ آپ کو آگے بڑھنا ہے۔ اس کے لیے کچھ نہ کچھ آپ کو کھونا ہوگا۔ سب کو خوش کرنے میں اپنی زندگی کو برباد مت کیجئیے۔


تو اب تک کے لئے بس اتنا ہی ای ہوپ کہ آپ کو یہ ویڈیو پسند آئی ہوگی۔ اگر آپ کے پاس کوئی ایسا ٹوپیک ہے۔ جس سے کے دوسروں کی زندگی بدل سکتی ہے۔ تو آپ مجھے کمنٹ باکس میں بتا سکتے ہیں۔ مزید اس طرح کی ویڈیو دیکھنے کے لیے اس چینل کو سبسکرائب کریں۔ اور ساتھ بیل آئیکون پر بھی کلک کریں۔ تاکہ اس طرح کی کوئی ویڈیو مس نہ ہو۔ تھینکیو

0 Comments:

ایک پل - Urdu Quotes

Please include attribution to www.seekhly.com with this graphic.

one moment




Please include attribution to www.seekhly.com with this graphic.

one moment

Share this Image On Your Site

0 Comments:

کامیاب زندگی کی چابی


https://youtu.be/kwxM1w4GWYE
زندگی کو سمجھنے کے لیے میں آپ کو ایک مثال دیتا ہو۔

ہم سب کے ساتھ ایسا ہوتا ہے کہ زندگی میں بڑے بڑے پلان بناتے ہیں۔ کچھ بڑا کرنے کی سوچتے ہیں۔
اپنے گھر والوں کو ہر طرح کی خوشی دینے کا سوچتے ہیں۔

ہم سوچتے ہے کہ اپنا ہر ایک سپنہ پورے کرے گے، چاہے۔ کچھ بھی کرنا پرے۔ چاہے کوئی بھی تکلیف آئے
ہم سوچتے ہیں۔ کہ ایک دن اس دنیا کو بدلے گے۔
ہم یہ سب کرنے کا سوچتے ہیں۔ اس طرح کے اور بھی  بہت برے برے داوے کرتے ہیں۔

اگر میں سچ بتاؤں تو یہ سب داوے ہم اس وقت تک کرتے رہتے ہیں۔ جب تک ہماری آخری سانس نکل نہیں جاتی۔
اور ایک دن یہ آخری سانس بھی نکل جاتی ہے۔

اس سے پہلے کہ آخری سانس آپ کا ساتھ چھوڑے۔ آج آپ کے پاس ٹائم ہے۔ آج آپ اس زندگی کو بدل سکتے ہیں۔
آپ کے جو بھی خواب ہیں۔ جو بھی سپنے ہیں۔ اس کے لیے آج ہی محنت کرو۔ ان سپنوں کو پورا کرنے کے لیے کسی کی مدد کا انتظار مت کرو۔

آگر آپ کسی سے محبت کرتے ہیں۔ شادی کرنا چاہتے ہیں۔ تو وقت ضائع مت کریں۔ ابھی وہ وقت ہے جس میں آپ کیسی سے بول سکتے ہو۔ جس میں آپ کسی کو بتاتا سکتے ہوں۔ آپ کو نہیں پتا۔ آپ کے پاس اور کتنا وقت یا پھر اور کتنی سانس باقی ہے۔

زندگی ہر انسان کو صرف ایک چانس دیتی ہے۔ آپ اس زندگی میں کم از کم ایک بار ہر اس کام کے لیے رسک ضرور لے جسے آپ کا کرنا چاہتے ہیں۔ ہر اس کام کے لیے رسک لے جس کا آپ داوع کرتے ہیں۔ چاہے آپ اس کوشیش میں نکام ہو جاے۔ لیکن رسک ضرور لے۔


Share this Image On Your Site



شاید میری بات آپ کو کڑوی لگے۔

لیکن جس وقت آخری سانس آپ کا ساتھ چھوڑے گی۔ تب آپ کو اس نکامی کا دکھ نہیں ہو۔
آپ کو دکھ اس لیے نہیں ہوگا۔ کیونکہ کم از کم  آپ نے ایک بار کوشیش تو کی۔ آپ کو اس وقت مرنے کا  زرہ بھی پچھتاوا نہیں ہوگا۔
یہی زندگی کی حقیقت ہے۔ آپ کے پاس صرف ایک چانس ہے۔ اس ایک چانس میں زندگی آپ کو وہ سب سکھاتی ہے۔ جو آپ کییسی کتاب سے نہیں پرھتے۔
بلکہ یہ سب آپ ان نکامیوں سے سیکھتے ہیں۔ جن کے لیے آپ رسک لیتے ہیں۔

0 Comments:

ہم خوش کیوں نہیں رہ پاتے؟


اس زندگی میں ہم سب کسی منزل کو پانے میں کتنی محنت کر رہے ہیں۔ کوئی پیسے کے لیے۔ کوئی تعلیم کے لیے۔ کوئی صیحت کےلیے۔ کوئی نام بننانے کے لیے۔ تو کوئی کاروبار کے لیے۔ 

ان سب کو کرنے کی صرف ایک ہی ریزن ہے۔ وہ ہے خوشی۔ یہ سب محنت ہم خوش رہنے کے لیے کرتے ہیں۔ سکون حاصل کرنے کے لیے کررتے ہیں۔ 

لیکن میرے دماغ میں ایک سوال ہے۔ کہ 
ہم سب اس منزل تک پہنچنے کے لیے محنت تو کرتے ہیں۔ لیکن پھر بھی وہ خوشی نہیں ملتی۔ جو ہم چاہتے ہیں۔ جس کے لیے دن رات ہم محنت کرتے ہیں۔   

اس کے پیچھے کیا ریزن ہے۔ وہ میں آپ کو بتاؤں گا۔ 

جیسی ہم زندگی چاہتے ہیں۔ جو ہم فیوچر چاہتے ہیں۔ جو ہم نام چاہتے ہیں۔ یہ سب ہم حاصل کرسکتے ہیں۔ لیکن یہ تب ملے گا ۔ جب ہم دکھ درد کو برداشت کریں گے۔

بغیر محنت اور درد کے آپ کو کوئی منزل نہیں ملے گی۔ کوئی کامیابی نہیں ملے گی۔

ہم یہ سب درد برداشت کرسکتے ہیں۔ کوئی دوسرری چیز نہیں روکتی۔ بلکہ جو ہمارے اندر کا ڈر ہے۔ وہ ہمیں روکتا ہے۔ اپنے بارے میں ہم سب کچھ اچھا تو سوچتے ہیں۔ لیکن اس سوچ کو پورا کیسے کرنا ہے۔ یہ نہیں سوچتے۔ کن طریقوں سے کرنا ہے۔ یہ نہیں سوچتے۔ کن چیزوں کا مقابلہ کرنا ہے۔ یہ نہیں سوچتے۔


آپ کو منزل تب ملے گی۔ جب آپ چیزوں کو اچھی طرح سے جج کرو گے۔ تو یہ ججمینٹ آپ کو تب آئے گی۔ جب آپ  ہر طرح کے ایکسپیرئینس فیس کروں گے۔

جیسے ہر کوئی جنت میں جانا چاہتا ہے۔ لیکن موت سے ڈرتا ہے۔ ہر کوئی کامیابی چاہتا ہے ۔ لیکن نکامی سے ڈرتا ہے۔ تو پھر کبھی نکامی سے مت ڈرو۔ کبھی محنت کرنے سے مت ڈرو۔

اپنے گولز لکھوں۔ اپنے مقصد لکھوں۔ ان کو پورا کرنے کے لیے اپنے آپ کو پوش کرو۔ کیوں کہ کوئی دوسرا آپ کے لیے کچھ نہیں کرے گا۔ جس منزل کو حاصل کرنا چاہتے ہو۔ اس کا راستہ آپ نے خود پورا کرنا ہے۔

ہم تب کوئی کام پورا نہیں کرپاتے جب ہم دوسروں پر امید لگاتے ہیں۔

ہم اس وقت بڑے طریقے سے فیل ہوتے ہیں۔ جب اپنی تیاری خود نہیں کرتے۔ اور دوسروں سے امید لگاتے ہیں۔

اگر کوئی کام اچھے طریقے سے کرنا چاہتے ہو۔ تو اسے خود کرو--- اس میں----- میں ٹیم ورک کی بات نہیں کررہا۔ ٹیم ورک ایک الگ چیز ہے۔ اس میں بھی آپ کو اپنا اپنا ٹاسک ملتا ہے۔
جتنے اچھے طریقے سے ٹیم کا ہر ممبر اپنا کام کرتا ہے۔ اتنے ہی اچھے سے ریزلٹ ملتا ہے۔

اسی طرح جو آپ اپنا کا ٹاسک ہے۔ جتنے اچھے طریقے سے کرسکتے ہو۔ کرو۔ پھر یہ آپ کی عادت بن جائے گی۔ کہ اپنے کام کی تیاری خود کرنی ہے۔

جیسے میں اپنے چینل کی بات کروں۔ تو میں سکریپٹ خود لکھتا ہو۔ ایڈیٹ اور آپلوڈ یہ سب خود کرتا ہو۔

اس کے ساتھ فیس بک کا پیج اور پین ٹڑرسٹ یہ سب خودی مینج کرتا ہو۔

اس کے پیچھے ایک وجہ ہے۔ میں نے کئی بار کوشیش کی کے ویڈیوں ایڈیٹ کرنے کا کام اپنے بھائی سے کروا لو۔ جو کے ایک ایڈیٹر ہے۔ لیکن مجھے وہ سب نہیں ملتا۔ جیسا میں چاہتا ہو۔

تو جو چیز آپ خود کرسکتے ہو۔ وہ کروں۔ چاہے زیادہ ٹائم دینا پڑے۔ جتنا آپ خود سے کام کروں گے۔ اتنی آپ کی سکل بہتر ہوگی۔ 


جو خوشی اور سکون ہم تلاش کرتے ہیں۔ وہ اسی میں ہے کہ ہم خود محنت کریں۔ ہمیں سکون کیوں نہیں ملتا۔ کیونکہ ہم محنت نہیں کرنا چاہتے۔ بغیر کچھ کیئے۔ سب کچھ حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ جب ہم محنت نہیں کرتے۔ اس کام کے لیے جو ہم سوچتے ہیں۔ تب ہم دکھی ہوتے ہیں۔ 

تو جو آپ کرسکتے ہو۔ وہ کرو۔
  
 

0 Comments:

ہمارے معاشرے میں کچھ عجیب خامیاں ہیں۔ جو رسک لینے سے روکتی ہیں۔



ہمارے معاشرے میں کچھ عجیب خامیاں ہیں۔ جو رسک لینے سے روکتی ہیں۔
ہمارے معاشرے میں کچھ عجیب خامیاں ہیں۔  جو ہمیں رسک لینے سے روکتی ہیں۔ کچھ بڑا کرنے سے روکتی ہیں۔

 ان سب کی شروعات کب ہوتی ہے۔ ان کی شورعات ہوتی ہے۔ اپنے گھر والوں سے۔ جب ہم کچھ سمجھنے لگتے۔ اپنے لیے کچھ کرنے لگتے ہیں۔ پھر دوست رشتہ دار سب ہمیں کسی نہ کیسی طریقے سے روکتے ہیں۔ تم اس کام کو نہیں کرسکتے۔ یہ بہت مشکل ہیں۔ صرف قسمت والے لوگ کامیاب ہوتے ہیں۔  

یہ سب لوگ ہمیں روکنے کے لیے اسی طرح کی سونی سنائی باتیں کرتے ہیں۔ اور یہ باتیں وہ لوگ کرتے ہیں۔ جنوں نے خود کی زندگی میں کبھی کچھ  نہیں کیا۔

یہ سب جعلی باتیں ہیں۔ اس معاشرے میں آپ کو ایسے بہت سے لوگوں ملے گے جو ایسی باتیں کر کے دوسروں کے سپنے ٹورتے ہیں۔
 ایک کامیاب زندگی وہ ہے جو آپ خود بناتے ہو۔ آپ جو کچھ کرسکتے ہو۔ وہ آپ کی اپنی سوچ ہے۔ جو باقی سب لوگوں سے الگ ہے۔ کیوں کہ سب لوگوں کی زندگی ایک جیسی نہیں ہوتی۔ دماغ ایک جیسا نہیں ہوتا۔ سب ایک دوسرے سے بلکل مختلف ہیں۔
یہ سب باتیں جو میں آپ کو بتارہا ہو۔ یہ سب میں نے بھی سونی ہیں۔ اور مان گیا تھا۔ میں یہ بات ماں گیا تھا۔ کہ میں اس قابل نہیں ہو۔ اس لائق نہیں ہو کہ کچھ کرسکوں۔ لیکن جب میں نے وہ سب کیا جو مجھے کرنے سے روکتے تھے۔ تب مجھے پتا چلا۔ کہ ان لوگوں کی باتیں جعلی تھی۔

ہمارے ساتھ جو سب سے بڑا مسلہ ہے۔ وہ کیا ہے۔ کہ ہم ان لوگوں کی باتوں میں آجاتے ہیں۔ وہ ہے کانفیڈینس۔ جب ہم بچپن سے گھر والوں کی اور اپنے قریبی لوگوں کی جعلی باتیں سنتے رہتے ہیں۔ اس وقت سے ابھی تک یہ جعلی باتیں ہمارا کانفیدینس اتنا کم کردیتی ہیں۔ کہ ہمارا دماغ ان کی باتوں کو مان جاتا ہے۔ ہم خود کو ان لکی مان لیتے ہیں۔

ان سے بچے کے لیے ایک چیز ہے۔ جو آپ کر سکتے ہو۔ کہ خود کے ائیڈیاز کو کبھی کسی کم مت سمجھوں۔  خود کو کبھی کسی سے چھوٹا مت سمجھو۔ خود سے ایک مضبوط ارادہ کرو۔ کہ کچھ بڑا کرنے میں۔ کچھ بڑا سوچنے میں۔ کوئی غلط بات نہیں۔
 لیکن کچھ بڑا نہ سوچنا یہ غلط ہے۔ بغیر کوشیش ہار مان جانا یہ غلط ہے۔

اگر ایک بار ٹرائی کرنے سے آپ وہ نہیں کر پاتے جو آپ چاہتے تھے۔ تب بھی روکے مت ہار مت مانے۔ میرے ساتھ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آپ کے ساتھ ------ ہم سب کے ساتھ ایسا ہوتا ہے۔ میں نے اپنے اپنی لاسٹ ویڈیوں میں بھی بتایاں تھا۔ کہ میری شروع کی ویڈیوز جب میں نے بنائی تو میں ٹیک سے لکھ نہیں سکتا تھا۔ بول نہیں سکتا تھا۔۔۔۔۔۔ یہ پریکٹس ہے۔ جو آپ کو کامیاب بناتی ہے۔

میں آپ کو موٹی ویٹ کرنے کے لیے ایک مثال دیتا ہوں۔ ایک تیر نشانے پر لگانے کے لیے اس کو  پوری طاقت سے پیچھے کھینچا جاتا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ اگر آپ پر بھی کوئی ایسا وقت آتا ہے۔
لوگ آپ کو جتنا پیچھے کھینچنے کی کوشیش کرے گے۔ تو سمجھ جانا اب کیسی منزل پر پوہنچنے والے ہو۔


0 Comments:

آپ انٹرنیٹ کو اپنا کاروبار بناؤں



آپ انٹرنیٹ کو اپنا کاروبار بناسکتے ہیں
اس ویڈوں سے آپ کی پوری زندگی بدل سکتی ہے۔ میں اس میں ایک ایسا راستہ بتاوں گا جس سے آپ کی زندگی ویسی بن سکتی ہے۔ جیسی آپ چاہتے ہیں۔
میں آپ کو اس ویڈیوں کا ٹاپک پہلے ہی بتا دیتا ہو۔ وہ یہ ہے. کہ انٹرنیٹ پر پیسے کمانے کا بہترین طریقہ کون سا ہے۔ جس کو آپ اپنا کیرئیر بھی بناسکتے ہیں۔ میں آپ کو اپنا پرسنل ایکسپیریئنس بتاوں گا. جو پہلے کیسی ویڈیوں میں نہیں بتایا۔
اگر واقعے آپ انٹرنیٹ سے پیسے کمانا چاہیتے ہیں۔ تو ایک بات سمجھ لے۔
اس کا سب سے بہترین طریقہ ہے۔ یوٹیوب اور بلاگ۔ یہ میں ان لوگوں کے لیے بتارہاں ہو۔ جو جانتے ہیں۔ کہ جتنی بھی پڑھائی کر لے۔ وہ ان کے کیسی کام نہیں آئے گی۔ اور جو انٹرنیت پر اپنا کریئر بنا چاہتے ہیں۔ 
تو یہ ویڈیو ان لوگوں کے لیے ہے۔ جن کے پاس کوئی ٹیکنیکل سکیلز نہیں ہیں۔  کہ وہ اس دنیا میں کیسے اپنے آپ کو سروائیو کریں۔

میں نے پیسے کمانے کے لیے ایسی ایسی مشکل فیس کی ہیں۔ کہ جب میں سوچتا ہو۔ تو پریشان ہوجاتا ہو۔ کہ کس طریقے سے پیسے کماؤں۔ جس کام میں مزا بھی آئے۔ اور کبھی بور بھی نہیں ہوں۔ اگر آپ کی بھی ایسی ہی سوچ ہے۔ کہ صرف  انٹرنیٹ سے پیسے کمانا چاہتے ہیں اور آپ کے پاس کوئی ٹیکنیکل سکیلز نہیں ہے۔ تو یوٹیوب اور بلاگ کے سوا کوئی دوسری آپشن کی طرف نہ جائے۔

یہ بات میں اپنے ایکسپیرینس  سے بتا رہا ہو۔ اگر آپ کی عمر 18 سے 22 کے درمیان ہے۔ تو یہ بیسٹ ایج ہے۔ جس میں آپ کے پاس بہت اچھا وقت ہے۔

اگر کچھ اپنا کرنا چاہتے ہیں۔ تو اس سے اچھا ٹائیم آپ کو نہیں ملے گا۔

میرے اندر ایسی بہت سی خامیاں ہے۔ جو آج سے پہلے میں نے کیسی کو نہیں بتائی۔ میرا پڑھائی کرنے میں زرہ بھی دل نہیں کرتا تھا۔ جس کی وجہ سے میں بہت پریشان رہتا تھا۔ مجھے اس بات کی ٹینشن رہتی تھی کہ اچھی ڈگری نہیں ہوگی تو مجھے جاب کون دے گا۔ میں کیسے اپنی ضرورتیں پوری کروں گا۔ لیکن میں نے خود کو سمجھایا۔ کہ جو میں کرنے والا ہو- اس کے لیے مجھے کوئی ڈگری کی ضرورت نہیں۔

جب میں نے یوٹیوب چینل شروع کیا تھا۔ میں بہت زیادہ سٹریس میں تھا۔ کیونکہ میں صرف  انٹرنیٹ سے پیسے کمانا چاہتا تھا۔  لیکن مجھے کچھ سمجھ نہیں آرہا تھا۔ کہ یہ سب کیسے کرو۔ کوئی بتانے والا نہیں تھا۔ انٹرنیٹ پر ہر دو نمبر طریقہ آزما کے دیکھا۔ لیکن کچھ حاصل نہیں ہوا۔ لیکن جیسے جیسے محنت کی تو مجھے اس بات کا پتا چلا۔ کہ میں نے کس چیز کو اپنا کیرئیر بنا ہے۔ 

مجھے صرف ایک چیز کا افسوس ہے۔ کہ میں نے یہ کام بہت لیٹ سٹارٹ کیا۔ لیکن یہ افسوس صرف کچھ وقت کے لیے رہے گا۔ تو اگر آپ انٹرنیٹ پر اپنا کرئیر بنا چاہتے ہیں۔ تو اس میں دیر نہ کریں۔ جس کام میں آپ کو مزا آتا ہے۔ بس اسے شروع کردے۔ اور شروع میں آپ کو تھوری محنت کرنی ہوگی۔

میں آپ کو موٹیویشن کے لیے بتادوں کہ میں نے شروع میں جو ویڈیوز بنائی تھی۔ ان پر مجھے کوئی اچھا ریسپونس نہیں ملا۔ لیکن میں نے ان سب سے بہت کچھ سیکھا۔ میں نے سیکھا۔ کہ مجھے لوگوں سے کیسے بات کرنی ہے۔ اب میں کسی بھی ٹاپک پر آسانی سے بات کرسکتا ہو۔ آسانی سے سمجھا سکتا ہو۔ میں نے سیکھا ہے کہ لوگوں کی ہیلپ کیسے کرنی ہے۔ میرے لیے یہ چینل سب کچھ ہے۔ کیونکہ کے میرا مقصد ہے۔ خود کو موٹیویٹ کرنا، آپ کو موٹیویٹ کرنا۔ یہ میرے لیے بہت بڑی لرنینگ ہے۔ 

اس کریئر میں آپ جتنی محنت کرے گے۔ انتا اچھا آپ کو ریسپونس ملےگا۔ بس آپ اپنی کوشیش کرتے رہو۔ اگر آپ میری پہلی ویڈوں دیکھیں تو آپ کو پتا چلے گا۔ کہ میں نے کہا سے شروعات کی۔

جن لوگوں نے میری پہلی ویڈیوز دیکھی ہیں۔ ان سب سے اچھا ریسپونس نہیں ملا جس کے بعد کوئی ویڈیو بنا میرے لیے آسان نہیں تھا- لیکن ان لوگوں کی طرح جنوں نے کبھی ہار نہیں مانی۔ میں بھی ویسے ہی ہار نہیں مانوں گا۔ اور اپنے ساتھ آپ سب کی مدد کروں گا- جو میرے جیسی سوچ رکھتے ہیں۔ تو جو لوگ اس طرح کی مزید ویڈیو دیکھنا چاہتے۔ اپنی زندگی میں کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ تو اس چینل کو سبسکرائیب کریں۔ اور ساتھ بل آئیکون پر بھی کلک کریں تاکہ نیو ویڈیوں آنے پر آپ کو اس کا نوٹیفیکیشن مل جائے۔ مزید پڑھیں

0 Comments:

جو شخص نکامی کا مقابلہ نہیں کر سکتا- وہ کبھی کامیابی نہیں پا سکتا

جو شخص نکامی کا مقابلہ نہیں کر سکتا- وہ کبھی کامیابی نہیں پا سکتا۔



اچھے دوست بڑے وقت کو بھی اچھا بنادیتے ہیں۔


کوئی تب تک نہیں جیت سکتا جب تک وہ اپنے ڈر کو نہ ہرا لے۔



اگر آپ سے کوئی کہتا ہے کہ تم یہ نہیں کرسکتے۔ تو وہ اپنے سوچنے کی حد بتاتا ہے۔ آپ کے نہیں۔ آپ خود پر بھروسہ رکھے۔


اس وقت کام کرو۔ جب لوگ سوتے ہیں۔
اس وقت کچھ نیا سیکھوں۔ جب لوگ کھیلتے ہیں۔
اس طرح زندگی جینا سیکھوں جیسے لوگ سوچتے ہیں۔



اگر آپ پریشانی کا مقابلہ نہیں کرسکتے۔ تو کامیابی حاصل نہیں کرپائیں گے


اگر آپ آپنی زندگی بدلنا چاہتے ہیں۔ تو اسے بدلنے کی کوشیش کریں۔ یا بھر اپنی اس سوچ کو۔




اگر آپ سوچتے ہو کہ کوئی برا کام کرسکتے ہو۔ تو آپ ادھا کام کر چکے ہو۔



خود پر اعتماد کرنا سیکھیں۔ کبھی دوکھا نہیں کھائیں گے۔



اگر آپ ایک چیز کو کرنے میں بہت زیادہ وقت لگاتے ہیں۔ تو آپ اسے کبھی پورا نہیں کر پاؤں گے۔



آگر آپ کو خود پر یقین ہے۔ تو آپ کو کوئی نہیں روک سکتاتا۔

1 Comments:

کامیابی آپ کے اندر ہے



جب ہم اپنے لیے کچھ کرنے کی کوشیش کرتے ہیں۔ کچھ برا کرنے کی سوچتے ہیں۔ تو کچھ لوگ ہمیں روکنے کی کوشیش کرتے ہیں۔ ان میں گھر والے بھی شامل ہوتے ہیں اور دوست بھی۔ یہ لوگ ہمیں ڈراتے ہیں۔ روکتے ہیں۔ اور ہمارے ارادے توڑنے کی پوری کوشیش کرتے ہیں۔ اور زیادہ تر یہ لوگ اس کوشیش میں کامیاب ہوجاتے۔
ہم میں سے زیادہ تر لوگ کیوں ان کی باتوں میں آجاتے ہیں۔ یہ میں بتانے والا ہو۔ اس ویڈیوں میں-

جو بات میں بتانے والا ہوں۔ اصل وجہ اس کے پیچھے ہے۔ اصل میں جو چیز  ہمیں کچھ برا کرنے سے روکتی، آگے برنے سے روکتی ہے۔ وہ چیز ہمارے اندر ہے۔
یہ جو ہمارے اند کا ڈر ہے۔ جو ہمارے اندر کام چھورنے کی عادت ہے۔ یہ ہمیں روکتی ہے۔

اب جو بات میں بتانے والا ہوں۔ اس کو سمجھ نے کی کوشیش کریں۔ جو لوگ ہمیں روکتے ہیں۔ گھر والے بھی اور دوست بھی۔ اگر آپ ان لوگوں کو جواب دینا جاہتے ہو۔ تو آپ کو کیا کرنا ہے۔
پہلے خود کے ارادے مضبوظ کرنے ہیں۔ کوئی کچھ بھی کہے۔ کہ آپ یہ نہیں کرسکتے جتنی مرضی وجہ آپ کو بتائیں۔ کہ پیسے کی وجہ سے نہیں کرسکتے۔ یہ سب اکیلے نہیں کرسکتے۔ جو کچھ مرضی کہے۔اگر آپ اپنے اندد کلیر ہیں۔ آپ کو صاف نظر آہا ہیں کہ آپ کیسی طریقے سے وہ سب کرسکتے ہو۔ جو آپ چاہتے ہو۔ توپھر آپ کو کیا کرنا ہے۔ یہاں آپ کو وہی کرنا ہے۔ جو آپ چاہتے ہیں۔ جس میں آپ کو سوفیصد یقین ہے۔ کہ میں کسی طریقے سے یہ سب کر سکتے ہو۔ 

آپ کو خود سے کہنا ہے۔ کوئی بھی پریشانی آئے۔ ان سب کا سامنا کروں گا۔ نکامیوں کا سامنا کروں گا۔ لیکن چھوڑو گا نہیں۔ اگر آپ یہ کرگے۔ جو میں کہہ رہا ہو۔ تو پھر آپ کو کوئی نہیں روک سکتا۔ جس دن آپ نکامی کا سامنا کر گے۔ کہ جس راستے سے ایک بار نکام ہوئے تو کیا ہوا۔ اب اس طریقے سے نہیں بلکہ کوئی طریقے سے کروگا۔ تو جس دن آپ ایسا سوچنے لگ گیے۔ تب آپ انسٹوپ ایبل ہیں۔

چاہے لوگوں کو آپ نکام نظر آئے گے۔ لیکن حقیقت میں یہ آپ کی کامیابی کا حصہ ہیں۔  کیوں کہ نکامے ہونے کے راستے تو بہت ہیں۔ لیکن کامیابی کا صرف ایک۔

یہ نکامی ہی ہمیں سکھاتی ہے۔ کہ اب کونسا راستہ منزل کی طرف جاتا ہے۔

اگر آپ نواز و دین کی کو دیکھے۔ آپ کو پتا چلے گے۔ نکامی اور کامیابی میں کیا فرق ہے۔ جب اس نے اپنے گھر والوں کو بتایا کہ میں ایک ایکٹر بننا چاہتا ہو۔ ہیرو بننا چاہتا ہو۔ تو ان کے ساتھ بھی وہی ہوا۔ سب رشتے دارو نے، گھر والوں نے، دوستوں نے سب نے اس کا مزاق بنایا۔
لوگوں نے روکنے کی بہت کوشیش کی۔ کہ ہیروں والی شکل نہیں ہے۔ جسم نہیں ہے۔ کیسے ہیرو بنے گا۔ تمہیں کون فلموں میں لے گا۔ لیکن اس نے وہی کیا جووہ چایتا تھا۔ جو اسے پتا تھا کہ وہ کسی طریقے سے کرسکتا ہے۔

شروع میں آپ کو نواز و دین صدیقی کی طرح  ہر جگہ سے واپس مایوس لوٹنا پڑگے۔ وقت لگے گا۔ تب جاکر آپ اس جگہ پہنچوں گے۔ جہاں آپ چاہتے ہو۔
 تو آپ جو چاہتے ہو بس وہی کرتے رہو۔ کبھی افسوس نہیں ہوگا۔ 

جیسے میں وہ کر رہا ہو جو میں چاہتا ہو۔ چاہے سب کچھ ویسا نہیں ہوتا۔ جو میں سوچتا ہو۔ لیکن ان لوگوں کی طرح جنوں نے کبھی ہار نہیں مانی۔ میں بھی ویسے ہی ہار نہیں مانوں گا۔ اور اپنے ساتھ آپ سب کی مدد کروں گا جو میرے جیسی سوچ رکھتے ہیں۔ تو جو لوگ اس طرح کی مزید ویڈیو دیکھنا چاہتے۔ اپنی زندگی میں کچھ کرنا چاہتے ہیں۔ تو اس چینل کو سبسکرائیب کریں۔ اور ساتھ بل آئیکون پر بھی کلک کریں تاکہ نیو ویڈیوں آنے پر آپ کو اس کا نوٹیفیکیشن مل جائے۔

2 Comments:

اپنے ڈر سے مت دڑو۔ آیئں کچھ الگ سیکھیے





برا وقت، مشکل فیصلے،  عظیم قربانیاں اور مشکل میں صبر کرنا، یہ سب کامیابی زندگی کا حصہ ہیں۔

نکام ہونا، غلطیاں کرنا، اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ کہ آپ نے کتنی غلطیاں کی۔ کتنی بار نکام ہوئے۔ سب جیزیں ویسے نہیں ہوتی جیسے ہم چاہتے ہیں۔ اگر آپ گر جاتے ہیں تو دوبارہ اٹھے لیکن ہار مت مانے۔
جو لوگ کامیاب ہوتے ہیں وہ کیا کرتے ہیں؟ ان کی کامیابی کی سب سے بری وجہ ہی یہی ہے۔ کہ وہ خود پر یقین کرتے ہیں۔ ان کے ارادے مضبوظ ہوتے ہیں۔ لوگ ان کو بھی تانے دیتے ہیں، وہ سب کہتے ہیں جو آپ برداشت نہیں کرپاتے۔
لیکن اگر  آپ اندد سے مضبوط ہیں۔ تو یہ لوگ سوائے بولنے کے کچھ اور نہیں کرسکتے۔ تو اس وقت آپ خود  سے کہے کہ ایسا کب تک چلے گا کیا ہر مشکل پر پیچھے ہٹ جاؤں گے۔


اس سے کوئی فرق نہیں پرتا آپ کی زندگی میں کتنی مشکلات آتی ہیں۔ کتنے ارادے ٹوتے ہیں۔ اور اگر کوئی مشکل وقت آتا ہیں توخود سے کہو یہی وقت ہے مضبوطی سے مقابلہ کرنے کا، یہی وقت ہے ان کو آسان کرنے کا۔ اگر ایک راستے بند ہے تو کیا ہوا۔  منزل ایک ہے، راستے اور بھی ہیں۔

بس کبھی دل چھوٹا مت کروں۔ اگر کوئی چیز ہماری سوچ کے مطابق نہیں ہوتی تو ہم خود کو نکام سمجھتے ہیں لیکن اس بات کا ہرگز یہ مطلب نہیں ہے۔ اگرکوئی کام آپ کی سوچ کے مطابق نہیں ہوتا تا کیا ہوا۔ کم آز کم آپ نے کچھ کرنے کی کوشیش تو کی۔ آپ کا کوئی پلان تو ہے۔ کوئی ٹارگیٹ تو ہے۔ جیسے آپ حاصل کرنا چاہتے ہو۔ یہ کیسی کو پتا نہیں ہوتا کہ اپنے پلان کو کیسے پورا کریں۔ بس ایک بات کا پتا ہونا چاہیے کہ جو آپ سوچتے ہو اسے کیسی طریقے سے کر بھی سکتے ہو۔ 

بس شروعات کرو۔ آپ کو کچھ لوگ ضرور بولے گے۔ کہ تم نہیں کرسکتے لیکن یہ وہ لوگ ہیں۔ 
جو لوگ خود کو بھی نہیں جانتے۔ اپنے کیسی پلان کو نہیں جانتے،  اپنے ٹارگیٹ کو نہیں جانتے، یہ بھی نہیں جانتےکہ ان لوگوں نے زندگی میں کیا کرنا ہے۔ یہ لوگوں خود کچھ نہیں کرپاتے۔ سوائے دوسروں کو تانے دینے کہ۔ 

اگر آپ کی سوچ بھری ہے ارادے برے ہیں۔ تو ایسے لوگ آپ کو بھی تانے دے گے۔ آپ کے اندر ایک ڈر پیدا کرنے کی کوشیش کریں گے۔ یہ لوگ نہیں جانتے کہ آپ یہ کام کرسکتے ہو یا نہیں۔ بلکہ یہ بات آپ خود جاتنے ہو۔  کہ یہ کام آپ کے لیے کتنا آسان ہے۔ اور کب اسے پورا کرسکتے ہو۔ 
یہ وہ لوگ ہیں جو آپ کو  بتاتے ہیں کہ آپ صحی راستے پر ہو۔ اور آپ کی سوچ ان سے کتنی بہتر ہے۔ اب جو آپ کرنے والے اس کو  پورا کرنے کی پہلی شرط یہ ہے کہ کبھی روکوں مت۔ بس کوشیش کروں۔ یہ لوگ کبھی خاموش نہیں ہوگے۔ ایسے لوگوں کی باتوں برداشت کرنی ہوگی۔ یہ لوگ آپ کو ہر صورت میں تانے دے گے۔ جب آپ اپنے مقصد کو پالو گے۔ یہ تب بھی تانے دے گے۔
 آپ کے راستے میں نکامیاں بھی آئے  گی لیکن ان کو  تسلیم مت کرو، اور کبھی دل چھوٹا مت کرنا۔ نہ اپنا اور نہ دوسروں کا۔ اگر آپ انٹرنیٹ پر دیکھیں تو جتنے بھی کامیاب لوگ ہیں وہ سب ان حالات سے گزرے ہیں- ہر بار نکامی سے کچھ نا کچھ نیا سیکھتے ہیں۔ 
آپنے ڈر کا مقابلہ کرتے ہیں۔ بس وہ کبھی روکتے نہیں۔

1 Comments:

ہر انسان کے اندر ایک خاص چیز ہوتی ہے. جو اسے کامیاب بناتی ہے.



ایک کامیاب انسان بنے کے لیے، امیر بنے کے لیے، کچھ برا کرنے کے لیے۔ آپ کو صرف ایک چیز کی ضرورت ہے۔ اگر آپ کے اندر یہ چیز ہے۔ تو آپ یہ سب کرسکتے ہیں۔
اس چیز میں کامیاب بنے کے وہ سب طریقے ہیں۔ جن کی آپ کو ضرورت ہے۔ تو یہ چیز میں بتانے والا ہو اس ویڈیوں میں۔
ہم لوگ ہمیشہ خود سے بری بری باتیں کرتے ہیں۔
کبھی روکوں مت۔ کبھی ہمت مت ہارو۔
بس کوشیش کرتے رہو۔ آگے برھتے رہو۔ ایک دن کامیابی ضرور ملے گی۔
ہم یہ سب خود سے بول تو لیتے ہیں۔ لیکن کبھی ان پر عمل نہیں کرتے۔ تو یہ عمل کیسے کریں۔ اس کو حل کرنے کے لئے ایک یہی چیز ہے جو میں آپ کو بنانے والے۔ جو سب پریشانیاں حل کر دے گی۔ وہ ہے عادت۔
آپ کو ایک عادت بنانے کی ضرورت ہے۔ اس کے بغیر آپ کوئی ایک کام بھی زیادہ دیر نہیں کرسکتے۔
اگر آپ کو کوئی کام کرنے کی عادت ہے۔ تو پھر آپ کیسی چیز کی بھی فکر نہیں کرتے۔ آپ اس کام کے ریزلت کی بھی فکر نہیں کرتے اچھا ہے۔ لوگوں کیا کہتے آپ ان کی بھی فکر نہیں کرتے۔ کیونکہ آپ کو اس کی عادت ہے۔ چاہے کتنی بھی رکاوٹ آئیں آپ اس کام کو کیسی قیمت پر بھی کرنے کےلیے تیار رہتے ہیں۔
اگر آپ گیم کیھلتے ہیں تو یہ آپ کی عادت ہیں۔ مووی زیادہ دیکھتے ہیں تو یہ آپ کی عادت ہے۔ گانے  زیادہ سننتے ہیں تو یہ آپ کی عادت ہے۔  کیسی بھی طرح کا کچھ بھی ایسا کام جو آپ چھوڑ نہیں سکتے وہ آپ کی عادت ہے۔ جو آپ بغیر کیسی لالچ کے بھی کرو گے۔ آپ کو ان کے لیے نام، پیسہ، شہرت ایسی کوئی لالچ کی ضرورت نہیں ہوتی۔ یہ سب آپ  ان سب چیزوں کے لئے نہیں بلکہ آپ عادت پوری کرنے کے لیے کرتے ہو۔
اور اگر کسی بھی چیز کی عادت آپ کو پر جائے تو  آپ  وہ کام آپ چھوڑ نہیں سکتے۔
جب آپ سگرٹ پیتے ہیں تو آپ کو خوشی ملتی ہیں۔ سکون ملتا ہے۔ کیونکہ یہ آپ کی عادت بن چکی ہے۔
اسی طرح کوئی بھی شخص ہے۔ جس کو آپنے کام کی عادت ہے۔ چاہے وہ کوئی بھی ہو۔ جب وہ کام کرے گا۔ تو اسے اسی طرح اچھا لگے گا جیسے ایک سگریٹ پینے والے کو لگتا ہے۔
اگر آپ ان سے سگریٹ چھورنے کو کہے گے، کیا وہ چھورے گا۔ کبھی نہیں۔ وہ یہ کرنے کے ہزار بہانے بنائے گا، گھر چھوڑ دے گا۔ باقی رشتے ختم ہوتے ہیں تب بھی نہیں چھوڑے گا۔ یہاں تک کے اگر خود بھی چاہے تو بھی نہیں چھوڑ سکتا۔
اب اگر آپ سوچے کہ ایسی ہی عادت آپ کو کامیاب ہونے کے لیے لگ جائے، پھر آپ کو بھی اس انسان کی طرح کیسی بات کی کوئی فکر نہیں ہوگی جو نشہ کرنے کا عادی ہے۔ 
ایسی طرح اگر اپ پیسہ کمانے کی عادت بنالے۔ ایک کام کرنے کی عادت بنالے۔ اپنی انرجی کو صیح استعال کرنے کی عادت بنالے۔ خوش رہنے کی عادت بنالے۔
اس کے بعد آپ کو کامیابی سے کوئی نہیں روک سکتا۔ یہاں تک کہ آپ بھی نہیں۔ 
تو پھر کیوں نا ہم اپنی انرجی کو ایسی جگہ استعمال کریں کہ آنے والے وقت میں اس سے فائرہ حاصل ہو، اور یہ آپ تب ہی کر پاوں گے جب آپ کو کوئی لالچ نہیں ہوگا۔ یہ آپ کی عادت ہونی چاہیے۔ مزید پڑھیں

2 Comments:

آئیں یہ بات سمجھ لیں۔ پیسوں کی پریشانی نہیں ہوگی


ہر انسان کی زندگی میں جتنی بھی پریشانیاں آتی ہیں۔ تعلیم حاصل کرنے کی۔ کاروبار کرنے کی۔ گھر بنانے کی۔ یہ سب پریشانیاں ہماری زندگی میں آتی ہیں. مگر ہم کسی وجہ سے ان کو حل نہیں کرپاتے- مجھے لگتا ہے کہ اس کی سب سے جو بری وجہ ہے۔ وہ ہے پیسہ۔   
 چاہے کچھ بھی ہو ان پریشانیوں کا تعلق پیسوں سے نکل ہی آتا ہے۔  
تو آج ہم اس پروبلم کے بارے میں بات کریں گے۔ بلکہ اس پروبلم کا ٪100 حل نکالے گے۔ جس میں کوئی ادر اودر کی بات نہیں ہوگی۔ یہ ایک پریکٹکل سلوشن ہوگا۔ میں آپ کو اس ویڈیو میں بتاؤں گا کہ آج کے دور میں وہ کون سے طریقے ہیں جن کے ساتھ آپ پیسے کماسکتے ہیں. اس میں ایسی کوئی بات نہیں ہوگی جو کہ آپ نہ کرسکے.

اس ویڈیوں کے بعد آپ جانے گے کے پیسہ کمانا کتنا آسان کام ہے۔ جس کے بعد آپ سوچنے پر مجبور ہو جاؤ گے۔ کہ آپ نے زندگی کا کتنا وقت ضایع کر دیا۔

اگر زندگی میں خوش رہنا چاہتے ہو تو اس کا صرف ایک طریقہ ہے۔  وہ یہ ہے کہ آپ ضرورت سے زیادہ پیسے کمائے۔ آپ کو پتا ہونا چاہیے کہ آپ نے کتنے پیسے کمانے ہے۔ اور پھرآپ نے اس سے بھی زیادہ کمانے کی کوشیش کرنی ہے۔ یہ میں اس لیے بتا رہا ہو کہ ضرورت آنے پر یہی پیسہ آپ کے کام آئے گا۔ جس سے آپ کی بہت ساری پریشانیاں دور ہوگی۔
اب آپ کی ضروریات کیسی ہیں یہ تو آپ بہتر جانتے ہیں۔ جیسے کہ کچھ لوگ آپنی زندگی میں بہت اچھے کام کرنا چاہتے ہیں جس سے کہ ان کو خوشی ملے۔ اور اس لیے وہ لوگوں کی مدد کرنا چاہتے ہے۔ ان کی ضرورت پوری کرنا چاہتے ہیں۔ تو یہ چیز بھی ایک طرح آپ کی زمہ داری ہے۔ کہ آپ نے خود کے علاوہ ان لوگوں کی ضروریات بھی پوری کرنی ہیں۔
تو اب آپ یہ ضرورت کیسے پوری کریں گے۔ یہ آپ صرف اسی صورت کر سکتے ہیں کہ جب آپ کے پاس پیسے ہوگے۔ اور وہ بھی ضرورت سے زیادہ۔ یعنی کہ آپ کو اپنی ضرورت سے زیادہ پیسے کمانے ہوگے۔
اگر آپ زندگی میں واقع ایک سچی خوشی حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ تو آپنے پیسوں سے کیسی ضرورت مند کی مدد کر کے دیکھے۔ میں پورے یقین کے ساتھ کہتا ہو کے آپ کو ایسی خوشی دنیا کے کیسی بھی کونے میں نہیں ملے گی۔ 

اس سے پہلے میں بھی یہی سوچتا تھا کہ پیسوں سے ہم خوشیاں نہیں خرید سکتے۔ لیکن اب آکر مجھے لگتا ہے۔ کہ صرف پیسہ ہی ایک چیز ہے۔ جس سے ہم ایسی خوشیاں حاصل کرسکتے ہیں۔

اسی لیے  میں بتاں رہا ہو کہ ضرورت سے زیادہ پیسے کماؤں کیوںکہ ضرورت وہ چیز ہے جو ہمیشہ بھرتی ہے۔ ہم چاہتے ہویے بھی اسے کم نہیں کر پاتے۔ تو جب ضروریات بھڑتی ہیں تو ہمیں کمائی بڑھانی پڑتی ہیں۔
تو یہ وہ پوائینٹ ہے جو میں بتانا چاہ رہا ہو۔ کہ زندگی میں آپ کی جتنی بھی ضرورت ہے۔ آپ کو اس سے زیادہ محنت کرنی ہوگی پھر ہی آپ زندگی میں خوش رہ پاؤ گے۔  ورنہ کم از کم اتنا کماؤں کے ضرورت پرنے پر کیسی سے مانگنا نہ پرے- 
اب پیسے کیسے کمانے ہیں وہ بھی میں آپ کو بتاؤں گا۔ بس آپ یہ ویڈیوں دیکھتے جاؤں۔

آج کے دور میں انٹرنیٹ سے پیسے کمانہ بہت آسان ہوگیا ہے۔ کچھ لوگ سوچے گے کہ کیسے آسان ہے۔ بس آپ سنتے جائے۔ اور سمجھنے کی کوشیش کرئے۔
انٹرنیٹ ایک ایسی چیز ہے۔ جس سے کہ آپ بہت طریقوں سے پیسے کما سکتے ہیں۔ اس وقت بھی اسے بہت سے لوگ جو کے انٹرنیٹ پر پیسے کماں رہے ہوگے۔ یا پھر کمانے کے طریقے دیکھ رہے ہو گے۔ 
آپ کو بس کوئی ایسی چیز بتانی ہے۔ جو لوگوں کی ضرورت پوری کر جائے۔ وہ کچھ بھی ہو سکتا ہے۔ آپ لوگوں کو کوئی پراڈکٹ بیچ سکتے ہو۔ ان کو انٹرٹین کرسکتے ہو۔اور ایسی اور بھی بہت ساری چیزیں ہیں جو کہ آپ انٹرنیٹ پر کر سکتے ہو۔ لیکن یہ آپ تب کر سکوں گے جب آپ کا اس میں کوئی انٹرسٹ ہوگا۔ اگر آپ دیکھے تو انٹرنیٹ پر بہت آسانی سے پیسے کما سکتے ہیں۔ بہت سے لوگ ہیں جن کا کریئر ہی انٹرنیٹ ہے۔ جو کہ صرف یوٹیوب اور بلوگینگ سے لاکھوں کماں رہے ہیں۔
کیسی کے پاس کوئی نالج ہے تو وہ یوٹیوب پر لوگوں کو بتا رہا ہے۔ یا پھر بلاگ پر لکھ رہا ہے۔ جیسے بھی اس کے لیے آسان ہے۔ وہ اسی طریقے سے لوگوں کو بتا رہا ہے۔ اور یہ ہر کوئی کر سکتا ہے۔
جیسے کوئی استاد ہے، تو لیکچر دے رہا ہے۔ اسی طرح ہر کوئی صرف انٹرنیٹ سے لاکھوں کماں رہے ہیں۔ جن کے پاس صرف انٹرنیٹ کے سوا اور کچھ نہیں ہے۔ تو اگر یہ لوگ کر سکتے ہیں تو پھر آپ بھی کر سکتے ہیں۔ یوٹیوب پر ایک چینل بنائے اور جو بھی نالج آپ کے پاس ہے۔ اس کی ویڈیو بنا ڈالے۔  
  

2 Comments:

کبھی نہ ہار ماننے والی عادت

خود کو کمزور مت سمجھے۔ آپ اکیلے بھی بہت کچھ کرسکتے۔ اکثر لوگ شکایت کرتے ہیں۔ کہ گھر والوں نے میری مدد نہیں کی۔

اگر آپ کو اپنے گھر والوں سے شکایت ہے تو اس بات یاد رکھیں کہ یہ آپ کے سپنے ہیں۔ آپ نے کود ان کو پورا کرنا ہے۔ اور خود ہی ان کو انجوئےبھی کرنا ہے۔اگر
آپ کے گھر والے آپ کو کسی کام سے روکتے ہیں تو پھر ایک بار یہ بھی سوچوں کے بچپن میں کتنے اسے کام تھے جن سے بھی گھر والے روکتے تھے لیکن آپ نے پھر بھی گھر والوں کے خلاف جا کر کیئے۔
اب اگر اپنے کریئر کے لیے کچھ اچھا کرنا چاہتے ہو۔ تو پھر گھر والوں سے کیوں ڈر رہے ہو۔ کہی نکامی سے تو نہیں ڈر ہے کہ اگر نکام ہو گیا۔ تو پھر کیا کروں گا۔

اگر آپ اسی ہی حالت میں ہے۔ تو اس کی صرف ایک وجہ ہے۔۔۔۔ صرف ایک

وہ یہ کہ آپ کو خود پر یقین نہیں ہے۔
اگر کوئی آپ کی مدد نہیں کرتا۔ تو فکر مت کریں۔ آپ کو کیسی سے بھی مدد لینے کی ضرورت نہیں ہے۔ ایسے بہت سے لوگ ہیں۔ جن کے پاس کھانے کے لیے پیسے نہیں تھے۔ لیکن ان لوگوں نے صفر سے اپنا کامیابی کا سفر شروع کیا۔ اور کچھ پاس نہ ہوتے ہوئے بھی کامیابی کو اپنی زندگی کا حصہ بنیا۔

البرٹ آئن اسٹائن سکول میں سب سے بوقوف لڑکا سمجھا جاتا تھا۔ اس سے کوئی بات کرنا پسند نہیں کرتا تھا۔ لیکن اب اسے کون نہیں جانتا۔ پوری دنیا میں اس کا نام ہے۔ آخر ان لوگوں میں کوئی تو بات تھی۔
اور بات صرف ایک تھی خود پر اعتماد۔ اور دوسری کبھی نہ ہار ماننے والی۔

0 Comments:

اگر آپ سپنے دیکھ سکتے ہیں.تو انھیں پورا بھی کر سکتے ہیں


اس دنیا میں ہر انسان سپنے دیکھتا ہیں۔ لیکن سب لوگوں کے سپنے پورے نہیں ہوتے۔ کبھی اپنی وجہ سے، کبھی گھر والوں کی وجہ سے اور کبھی اس دینا کی باتوں کی وجہ سے۔ 
کامیاب زندگی سے پہلے ہمیں لوگوں کی یہ سب باتیں پرداشت کرنی پڑتی ہیں۔  کہ ابھی تم بہت چھوٹے ہو۔ پہلے بڑے ہو جاؤں۔ اتنے بڑے کام نہیں کر سکتے۔ 
یہ دنیا کہ لوگ وہی کہیں گے جو ان کا کام ہے۔ آپ کو ہر چیز کے تانے ملے گے۔ آپ کی عمر اور زمہ داریوں کو آپ کی کمزوری بنائے گے۔ کچھ بھی بڑا کرنے سے آپ کو روکے گے۔
اس کی کیا وجہ ہے کہ ایک امیر شخص امیر بنتا جاتا ہے۔ اور غریب اور زیادہ غریب۔
اس کی کیا وجہ ہے کہ ایک انسان جس کے پاس اچھی ڈگری ہوتی ہے۔ امیر نہیں بن پاتا۔ اور جس کے پاس کوئی ڈگری نہیں ہوتی ہے پھر بھی امیر بن جاتا ہے۔

جو لوگ اپنی زندگی میں زیادہ کچھ حاصل نہیں کر پاتے۔ چاہے پیسہ ہو یا اچھی ڈگری۔ ایک ریسڑچ کے مطابق ایسے لوگ آپنے دماغ کو صحی استعمال نہیں کرتے۔
آگر آپ پیسے کمانا چاہتے ہیں تو آپ کے پاس کوئی ایسی چیز ہونی چاہیے، ایسا ٹیلنٹ ہونا چاہیے، ایسی سوچ ہونی چاہیے۔ جو پیسے کو آپ کو طرف کیھنچے۔
سب سے پہلے آپنے لیے کچھ وقت نکالے اور سوچے کہ آپ کے پاس ایسی کون سی چیز ہیں۔ جس کے کرنے سے آپ تھکتے نہیں۔ کبھی بور نہیں ہوتے۔

آپ یہ تو نہیں سوچ رہے کہ اس میں کون سی نیئ بات بتا رہا ہو۔ لیکن آپ یہ ویڈیوں مکمل دیکھے۔ اس سوال کا جواب آپ کو مل جائے گا۔ آپ کو کامیابی کا راستہ مل جائے گا۔ آپ کو پیسہ کمانے کا طریقہ مل جائے گا۔
کیونکہ یہ وہ راستہ ہے. جس سے میں خود بھی پیسے کما رہا ہو.
سب سے پہلے آپ اپنے ان کاموں کی لسٹ بناؤں، آپ ان کاموں کی لسٹ بناوں  جو کام آپ کو بہت زیادہ پسند ہیں، اور جس کام سے آپ کچھ پیسے بھی کما سکتے ہیں۔ 

پھر ان میں سے وہ سب کم نکال دو جو اس سے بھی بہت اچھے لگتے ہیں۔ اس کے ساتھ کوئی ایسا کام بھی دیکھوں جس سے کبھی پیسہ آنا بند نہ ہو۔ اور یہ کام ایسا ہونا چاہیے۔ کہ آپ اسے جتنا بھی کرلے کبھی تھکے نہیں۔ جو کہ آپ ساری زندگی کر سکے۔ مطلب آپ ساری زندگی بھی یہ کام کریں تو کبھی تھکے نہیں۔

کیونکہ دینا کی سب سے بڑی کمپنی کے مالک نے کہا تھا۔ اگر دنیا میں کو بڑا کام کرنا ہے تو آپنے کام سے پیار کروں۔
اب اگر ان میں سے آپ نے کوئی کام کرنے کا ارادہ کر لیا ہے ۔ تو پھر اسے لوگوں کو دیکھوں جو آپ کے اس کام میں یا پھر آپ کی اس فیلڈ میں پہلے سے کامیاب ہو چکے ہیں۔

آپ ان لوگوں کی زندگی کے بارے میں پڑھوں۔ ان کی کامیاب زندگی کے بارے ویڈیوز دیکھوں۔ بل گیٹس۔ سٹیو جاب۔ ان سب کی بایوگرافی پڑوھوں۔ چاہے آپ یوٹیوبر بنا چاہتے ہیں یا بلوگر یا پھر کوئی بسنیس۔ اپنے تجربے کی بجائے ان لوگوں کی زنگیوں سے سیکھوں۔
اور اگر ان کو پھڑنے میں آپ کو مزانہیں آتا۔ تو شاید آپ اپنے کام کے لیے دل سے مطمین نہیں ہیں۔ یا پھر یہ کام آپ کو پسند نہیں ہے۔ تو آپ کو یہ سب کرنے میں تب ہی مزہ آئے گا۔ جب آپ نے صرف وہی کام کرنے کا ارادہ کیا ہوگا۔ کہ جن کو کرنے میں آپ کو مزا آتا ہے۔ آپ کو تب مزا آئے گا جب آپ کے سپنے ان لوگوں جیسے ہو گے۔
آپ جیسے جیسے اپنے کام میں اگے بھڑتے جائے گے۔ آپ کو خود پر یقین آتا جائے گا۔
آگر آپ اپنی زندگی کو کامیاب کرنا چاہتے ہو۔ تو زیادہ سے زیادہ اپنی فیلڈ میں انفرمیشن حاصل کروں۔ جیسے جیسے آپ کا اس کام میں علم برھتا جائے گا۔ آپ کو اس بات کا پتا چل جائے گا کہ آپ کے لیے اس فیلڈ میں کیا ضروری ہے اور کیا نہیں۔ تب آپ سمجھ جاؤں گے کہ آپ نے نشانہ کہا لگانا ہے۔

مثال کے طور پرجیسا کہ میں ایک یوٹیوبر بنا چاہتا ہو۔ تومجھے اپنی سکریپٹ بہتر کرنی ہوگی۔ اپنی آواز بہتر کرنی ہوگی۔ اسی طرح آپ کو آپنی ان سکیلز پر کام کرنا پڑے گا جن سے آپ پیسا کمانا چاہتے ہیں۔ تو اس کے لیے آپ کو پریکٹیس کرنی ہوگی۔ پریکٹس ہی ایک انسان کو کامیاب بناتی ہے۔ اس پر بروسلی کہتا تھا کہ میں اسے شخص سے نہیں دڑتا جس نے دس ہزار کؐکس کی ایک بار پریکٹس کی۔ بلکہ میں اس شخص سے دڑتا ہو۔ جو یک کک کی پڑیکٹس دس ہزار بار کرتا ہو۔

تو جب آپ کو آپنے کام کے بارے میں انفرمیشن ہوگی تب ہی آپ کوئی ایکشن لے سکوں گے۔ نہیں تو انفرمیشن کے بغیر اندھیرے میں نشانے لگاؤں گے۔
آپ جو آپنے دماغ سے بولتے ہو کہ میں یہ کام نہیں کر سکتا تو وہ کام آپ کے دماغ میں انٹر ہو جاتا ہے۔ پھر اس سے کوئی ٖفرق نہیں پڑتا کہ یہ کام تھیک ہے یا غلط، دماغ آپ کی بات مان لیتا ہیں۔ اس لیے آپ وہی سوچوں جو کرنا چاہتے ہو۔ صرف پیسہ کمانے طریقے سوچوں۔ صرف کامیابی کے طریقے سوچوں۔ یہ دماغ اس کو مان لے گا۔ بس خود کو بہتر بناتے جاؤں
 

3 Comments:

آپ کی سوچ کیسے آپ کو کنٹرول کرتی ہے؟ مشکل حل کرنے کے لیے ایک چھوٹا سا عمل


کیا آپ جانتے ہیں کہ آپ کے لے سب سے آسان وقت کونسا ہے
 جس میں آپ کوئی بھی کام کر سکتے ہو؟
جیسا کہ کامیاب زندگی کے لیے کچھ بڑا کرنا، محنت کرنا، اپنے سپنوں پر کام کرنا، مشکل فیصلے کرنا، اپنے دڑ کو کم کرنا، سستی کم کرنا۔
یہ سب آپ اس وقت بہت آسانی سے کرسکتے ہو، جب آپ موٹیویٹ ہوتے ہو،
اس وقت آپ پوری طرح سے انڑجیٹک ہو، تو اس وقت تو یہ سب کرنا زیادہ بڑی بات نہیں ہے۔
اصل بات تو تب شروع ہوگی جب آپ بغیر انڑجیٹک یہ سب کرو۔ 
مطلب آپ کا موڈ صحی نہیں ہے۔ کچھ کرنے کا بلکل دل نہیں ہے۔کیا آپ تب بھی آپ اتنی ہی محنت کرتے ہو۔ جب آپ انرجیٹک ہوتے ہوئے کرتے ہو۔
جب آپ کو غصہ آتا ہے۔ تو خود کو قابوں کرنا مشکل کام ہے۔ تو اس مشکل کو آسان کرنا ہے۔
آگر اس غصہ پر آپ کا پورا کنٹرول ہے۔ تو یہ بہت بڑی بات ہے۔ کہ آپ اس حالت میں بھی صحی فیصلہ کرتے ہو۔
آپ کے پاس وہ سب کچھ ہے جو دوسروں کے پاس ہے۔ آپ کے پاس دماغ ہے۔ سوچ ہے، وہ سب کچھ ہے جو ایک انسانی جسم کو چاہیے۔ یہ زندگی ایک گیم کی طرح ہے۔ جس کو کیھلنے کے لیے سب کے پاس ایک جیسا دماغ ہے۔ اس کو کیسے کھیلنا ہے تو یہ ہماری اپنی سوچ پر ہے کہ ہم اسے کیسے کیھلتے ہیں۔ تو یہ وہ چیز ہے جو سب کو ایک جیسی نہیں ملی۔
اگر آپ سوچتے ہو کہ ہر مشکل وقت میں بھی صحی فیصلہ کرسکتے۔ تو آپ واقعی میں ایسا کرسکتے ہو۔ آپ کی آپنی سوچ ہی آپ کی نکامی اور کامیابی کی سب سے بڑی وجہ ہے۔

2 Comments:

کوئی کام شروع کرنےکے لیے ضرورت سے زیادہ مت سوچے



یہ کہانی اسے دو لڑکوں کی ہے. جو کہ اپنی اپنی زندگی میں کچھ بڑا کرنا چاہتے تھے. دونوں کی ایک ہی طرح کی خواہش تھی.
کار ایک جیسی, گھر ایک جیسا اور زندگی بھی ایک جیسی گزارنا چاہتے تھے.
دونوں کا مقصد ایک جیسا تھا. لیکن زندگی میں  کرنا کیا ہے یہ دونوں کو نہیں پتا تھا.دونوں کا مقصد ایک ہی تھا کی اتنا پیسہ کما کر یہ سب کچھ حاصل کرنا ہے.
اب دونوں نے اپنے اپنے ٹیلنٹ کے بارے میں سوچنا شروع کیا کہ وہ کس چیز میں بہتر ہیں. اور کیا کر سکتے ہیں.
جو پہلا لڑکا تھا اس کا نام تھا ٹیلر اور دوسرا جسٹن, ٹیلر کوئی کام کرنے کے لیے زیادہ سوچتا نہیں تھا. بس کام شروع کر دیتا تھا. اور جسٹن ایک کام کرنے کے لیے ضرورت سے زیادہ سوچتا تھا.


اگر آپ سمجھے تو یہاں سے ان دونوں کی کہانی میں کچھ فرق ہے۔ ان دونوں کی دو مختلف عادتیں ہیں
وہ یہ کہ ٹیلر آپنے ہر کام کو تب ہی شروع کر دیتا جب وہ پوری طرح سے تیار بھی نہیں ہوتا. اور خود کو آہستہ آہستہ اس کام میں بہتر کرتا. جبکہ جسٹن تب کوئی کام کرتا جب وہ اس کی پوری طرح تیاری کر لیتا۔ اس کے اندر ایک دڑ رتھا۔ جسٹن غلطی کرنے سے دڑتا تھا.
اب یہ دونوں نے ایک پیپر پر لکنھا شروع کیا کے وہ کیا کیا کر سکتے ہیں. وہ کون سی چیز ہے جو وہ دوسروں سے بہتر کر سکتے ہیں. دونوں نے اپنے اپنے پلان کی ایک لسٹ بنالی.
اب ان دونوں نے اس میں سے یہ دیکھا کہ وہ کونسا کام ہے جو وہ ابھی نہیں کر سکتے. تاکہ اس کام کو وقت آنے پر کیا جائے۔
یہ اسے سب کام نکال کر ان دونوں کے پاس دس دس کریئر پلان رہ گیے. 
اب دس میں سے بھی یہ لوگ دیکھ رہے ہیں کہ ان میں سے وہ کونسا کام کرسکتے ہیں۔ جو کہ لانگ ٹرم ہو اور اس میں پیسہ بھی ہو. اور وہ اچھے سے بھی کر بھی سکتے ہو.
تو یہ سب نکال کر ان کے پاس پانچ پانچ کریئر پلان باقی رہے.


اب ان دونوں کے پاس آپنے آپنے پلان تھے جو کہ وہ بغیر وقت ضایع کیے اس کام کو شروع کرسکتے تھے. اب ہوا یہ کے ٹیلر نے زیادہ سوچا نہیں اور بغیر تیاری کے ہی کام شروع کر دیا.
تو ٹیلر نے تو اپنا کریئر شروع کر دیا جبکہ جسٹن ابھی یہی سوچ رہا تھا- کہ ان پانچ میں سے بھی وہ کونسا کام ہے جو وہ بغیر کسی غلطی کے کر سکتا ہے. اور جس کام کے لیے وہ پوری طرح تیار بھی ہے.
جسٹن بس سوچتا رہتا۔ جب کہ ٹیلر پوری محنت کرتا جاتا۔ یہاں تک کہ ٹیلر کو نکامی کا سامنہ کرنا پڑا لیکن پر بھی اس نے امید نہیں چھوری اور آخر کار اپنے مقصد میں بہترین کامیابی حاصل کی۔
ٹیلر نے زیادہ سوچا نہیں۔ صرف اپنے مقصد کو پورا کرنے کے لیے کام کیا۔ اپنے ویک پوائنٹ پر کام کیا۔ اور بہتر بنتا گیا۔
جبکہ جسٹن صرف سوچتا ہی رہا۔ دیکھا جائے تو جسٹن صرف کنفیوز تھا۔ اس کا سبق یہ ہے کہ ہمیں کوئی بھی کام کرنے سے پہلے جسٹن کی طرح اتنا نہیں سوچنا چاہیے۔
دنیا میں ایسا کوئی شخص نہیں ہے جو کہ ہر کام میں پرفیکٹ ہو۔ بس ضرورت اس بات کی ہے۔ کہ ہم خود کو امپروؤ کرے۔

1 Comments:

زندگی کو اپنے خوابوں کے طرح کیسے جیئے




کبھی بھی پریشانیوں سے گبرانا نہیں۔ بس یہ سمجھنا ہے زندگی ایک روڈ ہے۔ اور جو بھی پروبلمس ہیں وہ سب سپیڈ بریکر ہیں۔ جو کہ آپ کو کسی خوفناک حادصے سے بچاتے ہیں۔
ایک بات ہمیشہ یاد رکھوں انسان کو کبھی بھی ہمت نہیں ہارنی چاہیے۔ کیوں کے پہاڑوں سے نکلی ہوئی ہر ندی نے آج تک کسی سے نہیں پوچھا کے سمندر کتنا دور ہے اور کون سا راستہ اس کو جاتا ہے۔ کیوں کے یہ آپنا راستہ خود بناتی ہیں۔

زندگی میں ارادے تب مضبوط ہوتے ہیں جب آپ ڈرنے میں جتنی انڑجی لگاتے ہو۔ اؐتنی ہی انڑجی سپنوں پر کام کڑنے میں لگانی شروع کر دیتے ہو۔
زندگی میں بہت ساری مشکلات آتی ہیں۔ بہت ساری پریشانیاں آتی ہیں۔ پیسے نہیں ہیں، ٹائم نہیں ہے۔ گھر والوں کی سپورٹ نہیں ہے۔ ان سب باتوں سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ اگر آپ انکا مقابلہ کرنا نہیں چھوڑ رہے۔
آپ کا دڑ آپ کو قیدی بنا دیتا ہے۔ پھر بھی آپ خود سے امید رکھوں۔ خود پر یقین رکھوں۔ کہ میں اس دڑ کا مقابلہ کر سکتا ہو۔
آپ کی زندگی کا سب سے بڑا پڑاجیکٹ خود کو مزید بہتر کرنے کے علاوہ اور کوئی نہیں ہو سکتا- تو پھر کوئی آپ کو پسند کرے یا نہ کریں۔ تو آپ کے اندر یہ کانفیڈینس ہونا چاہیے۔میں بلکل ٹیھک ہو
چاہے کوئی مجھے پسند کرے یا نہ کرے۔ پر میں دوسروع کے نہ پسند کرنے سے خود کو بدلوں گا نہیں۔ کیونکہ ہو سکتا ہے ان کے علاوہ اور بھی اسے لوگ ہو گے جو مجھے اسے ہی پسند کریں گے- جیسا میں ہو۔

جب تک آپ اس بات سے پریشان ہے کہ لوگ آپ کے بارے میں کیا سوچے گے۔ تو آپ اپنی زندگی کو نہیں چلارہے۔ بلکہ یہ لوگ آپ کی زندگی کو چلارہے ہیں۔
تو آپ ان لوگوں کے لیے نہ سوچے. اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کے آپ روزانہ کتنی غلطیاں کر رہے ہو۔ اور زندگی میں کتنے سلوں آگے بھڑتے ہیں- لیکن آپ ان لوگوں سے آگے نکل چکے ہو جو لوگ کوشیش ہی نہیں کر رہے۔
کیوں کے بہت سے اسے لوگ ہیں- جو امیر بننا چاہتے ہیں۔ اپنا کاروبار شروع کرنا چاہتے ہیں۔ لیکن اس وجہ سے کچھ نہیں کر پاتے- کیونکہ وہ کوشیش نہیں کرتے۔





    

1 Comments:

دنیا کے سب سے کامیاب لوگ آخر کیسے کامیاب بنے؟


آپ میں سے بہت سے لوگ ہوں گے جنوں نے زندگی میں کچھ بڑا کرنے کا سوچا تو اس پر لوگوں نے آپ کا مزاق بنایا ہوگا۔
آپ کے بیسنس پلان کا مزاق بنایا ہوگا۔
آپ کی سوچ کا مزاق بنایا ہوگا۔
لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ ان لوگا کا سب سے بڑا آپ کو کیا فائدہ ہے.
جو لوگ آپ کا مزاق بناتے ہیں اصل میں یہی لوگ آپ کی مدد کرتے ہیں.
یہ لوگ آپ کی مدد کرتے ہیں زندگی میں کچھ بڑا کرنے کی.
زندگی میں کچھ حاصل کرنے کی. کچھ ایسا کرنے کی جو کہ وہ خود نہیں کر سکتے. 
لوگ آپ ہنستے ہیں کیوں کے آپ کی سوچ ان سے بڑی ہے.
لوگ آپ پے ہنستے ہیں کیوں کے آپ کے خواب اُن سے بڑے ہیں.

اگر لوگ آپ کا مزاق بناتے ہیں تو پھر سمجھ جاؤں کے آپ صحی راستے پر جا رہے ہو. کچھ برا کرنے جارہے ہو. سمجھ جاؤں کے کامیاب ہونے والے ہو۔ تو بس چلتے جاؤں. روکوں مت.


کیوں کہ یہ وہ لوگ ہےجو آپ کے بارے میں کچھ نہیں جانتے. وہ آپ کے ارادو کو نہیں جانتے کہ آپ کیا کر سکتے ہو.
آگر آپ کو کامیاب انسان بننا ہے۔ تو لوگوں کے مزاق، لوگوں کے تانے، لوگوں کی باتے ان سب کو برداشت کرنا سیکھنا ہوگا۔
اگر آپ واقعی کچھ برا کرنا چاھتے ہو- تو یہ بہت ضروری ہے۔ جب بھی آپ کا کوئی مزاق بنائے تو آپ کو خود پر پورا یقین ہونا چاہیے۔ آپ کو یقین ہونا چاہیے کہ اب میں انھیں کر کے دیکھاؤں گا۔
تب آپ کو کامیابی کا زیادہ مزہ آئے گا۔ جس وقت ان لوگوں کے منہ بند ہوگے۔ جو کہتے تھے آپ نہیں کرسکتے۔

آگر آپ انٹرنیٹ پر سرچ کریں۔ تو دیکھے گے جن لوگوں نے کچھ بڑا کیا ہے۔ وہ سب اسے بہت سے لمحوں سے گزرے ہیں۔ جن سے آپ گزر رہے ہو۔ بس ان کی کامیابی کا ایک ہی راز تھا۔ کہ ان لوگوں نے کسی کی بھی پروا نہیں کی۔ کسی کی بات نہیں سنی۔ کسی کا یقین نہیں کیا۔
آپ کوپتا جلے گا کے دنیا کے کامیاب لوگ سٹیو جابز، رچرڈ برنسن، تھامس ایڈیشن، البرٹ آئنسٹائن یہ سب کامیاب ہونے سے پہلے حیرت انگیز اور مشکل حلات میں سے گزرے ہیں۔
تو اگر آپ کو بھی اپنے سپنے پورے کرنے ہے تو اس میں کوئی شک نہیں، اسے ہی مشکل اور سخت حلات کا سامنا کرنا پڑے گا-








1 Comments:

How I Can Become A Successful Man | Power of Thinking - Motivational Video For Successful Life

0 Comments:

ایک کامیاب انسان کیسے سوچتا ہے؟

کیا آپ نے کبھی سوچا ہے۔ کہ جب آپ صحیح سے کوئی کام نہیں کر پاتے۔
تو وہاں! آپ برے آرام سے بول دیتے ہو کہ میں بیمار تھا، مھجے کہی جانا تھا،  اس لیے میں سکول نہیں آپایا۔
آفس وقت پر نہیں آپایا کیوں کے بارش بہت تھی۔
تو آفس میں اور سکول میں ہر کوئی آپ کی بات مان سکتا ہے۔ 
لیٹ آنے پر آپ کو ماف کر سکتا،
سکول میں کام نہ کرنے پر بھی مافی مل سکتی ہے۔
جب آپ کوئی بھی کام کرتے ہو، اس میں آپ کی غلطی معاف بھی کی جا سکتے ہیں۔
کہ اگلی بار ٹیک سے کام کرنا۔
لیکن! 
زرہ سوچے، آپ کے جو سپنے ہیں جو مقاصد ہیں۔ جن کو آپ،  آپنی زندگی میں پورا کرنا چاہتے ہو،
جو کامیابیاں حاصل کرنا چاہتے ہو،
کیا ان سب سے بھی یہ بولوں گے، مجھے کہی جانا، یا پھر آج بارش ہو رہی تھی۔ 
آپ کے جو بھی سپنے ہیں، جو بھی کامیابی پانا چاہتے ہو۔ 
ان کو آپ کے بھانوں سے کوئی فرق نہیں پڑتا،
آپ نہیں حاصل کروں گے تو کوئی اور کرلے گا، 

جو آپ کی طرح بھانے نہیں بنائے گا، صرف محنت کرے گا، بارش میں بھی اور بماری میں بھی۔

کامیابی اور آپنے مقصد کو پورا کرنے کے لیے صرف ایک بات یاد رکھنی ہے،
کچھ بھی ہو جائے،
کوئی بھی رکاوت کیوں نہ آجائے،
بھر بھی آپنے مقصد کی طرح بھرتے جانا ہے،

تو پھر کبھی روکنا نہیں،
کبھی تھکنا نہیں،
آج قسمت آپ کے ساتھ نہیں تو کیا ہوا،
ایک دن آپ کی محنت آپ کو ضرور ایک کامیاب شخص بنائے گی۔
اگر کچھ پانا ھے تو اتنا تو کرنا ھی ہوگا،
چاہے رو کر کرو یا ھنس،
یا تو خواب مت دیکھوں 
اور اگر دیکھے ہیں تو بھر ان کو پورا کروں 

تو ابھی کے لیے بس اتنا ہی اور اگر آپ کو یہ ویڈیوں پسند آئی ہے، تو مجھے کومینٹ میں ضرور بتائیے گا،
مزید ویڈیوں دیکھنے کے لیے اس چینل کو سبسکرائب کریں اور ساتھ بیل ائیکون پر کلک کریں تاکہ اس طرح کی کوئی بھی ویوڈیوں میس نہ ہو۔

0 Comments:

جدوجہد سے کامیاب زندگی بنتی ہے محنت سے نہیں




کیسی چیز کو حاصل کرنے کے لیے  جدوجہد کتنی ضروری ہے۔
آخر  جدوجہد کیا ہے آپ جو کہتے ہیں کہ میں نے اتنے سال محنت کی۔ آگر آپ کو کوئی چیز پسند ہے۔ اور آپ نے دن میں کیئ گھینٹے اس پر کام کیا، تو یہ   جدوجہد نہیں ہے۔ آپ ایسے Hard work تو بول سکتے ہو ، لیکن یہ  جدوجہد نہیں ہے-
تو جدوجہد کیا ہیں،  اگر آپ کو کوئی کام اچھا لگتا ہے اور اسے آپ کرتے جا رہے ہو، اس میں آپ صرف محنت کر رہے ہیں،  آبھی تک اپ نے کوئی  جدوجہد نہیں کی-
آپ کی  جدوجہد کی شروات تب ہوتی ہے جب آپ کو یہ کام کرنے کے لیے لڑنا پرتا ہے۔ آپ کوئی کام کر ریے ہیں۔ کرتے جا رہے ہیں۔ کرتے جا رہے ہیں
تو یہ صرف محنت ہے۔ لیکن آب ایک وقت آتا ہے کہ آپ یہ کام کر نہیں سکتے۔ پھر آپ کام کرنے کے لیے لڑ رہے ہیں اور کام پورا کرنے کے لیے محنت کر رہیں۔ اب آپ کو کام کرنے کے لیے  جدوجہد کرنی پر رہی ہے۔ یہ  جدوجہد ہے۔
مثال کے طور پر
جب آپ کوئی Game کھیلتے ہو۔ تو آپ کو اس میں مزہ آتا ہے۔ ٹھیک اسی طرح سے جب آپ اپنی پسند کا کام کرتے ہو، تو یہ بھی آپ کے لیے ایک Game ہے۔ اس میں کوئی  جدوجہد نہیں ہو رہا ہے۔ تو پھر  جدوجہد کب ہو گ؟
جب آپ کے گھر والے بوری طرح سے۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بوری طرح سے آپ کے سپنوں سے نفرت کررہے ہیں۔ کے آپ کو BSC ہی کرنی ہوگی۔ تو اس نفرت کے باوجود بھی آپ وہی کر رہے ہو جو آپ کا دل کہتا ہے۔تو یہ  جدوجہد ہے۔
آپ نہ MOVIES میں دیکھا ہو گا کہ جب کو HERO لڑ رہا ہوتا ہے۔ وہ تب تک بہت اسانی سے مقابلہ کرتا ہے جب تک اسے کچھ نہیں ہوتا۔ لیکن جب اسے کچھ زخم لگتے ہیں، ہاتھوں پر، پیروں پر، اور جسم پر۔ یہاں تک کہ وہ اب مقابلہ بھی نہیں کر سکتا۔
تو اصل میں یہ  جدوجہد  ہے۔ کہ اب وہ چل بھی نہیں سکتا۔ لیکن پھر بھی مقابلہ کر رہا ہے۔ ------چل بھی نہیں سکتا۔ پھر بھی مقابلہ کرنے کی کوشیش کررہا ہے۔
یہاں پر MARTIN LUTHAR نے کہا تھا۔
اگر تم اڑ نہیں سکتے تو بھاگوں۔
اگر تم بھاگ نہیں سکتے تو چلوں۔
اگر تم چل نہیں سکتے تو رینگتے ہوئے چلوں۔
تو آخر  جدوجہد کی Definition کیا ہے؟
آپ کسی کام کو کر رہے ہوں۔ جس میں آپ کو مزا آتا ہے۔ جو آپ کو پسند ہے۔ تو یہ آپ کا Passion ہے۔ اس میں آپ جتنی بھی محنت کریں۔ وہ صرف محنت ہے۔ STRUGGLE نہیں۔
آپ کی جدوجہد شروع ہوگی۔ لوگوں کے ھنسے سے۔
آپ کی جدوجہد شروع ہوگی۔ کم پیسوں میں بھی کام جاری رکھنے سے۔
آپ کی جدوجہد شروع ہوگی- لوگوں کے تانے سنے سے۔
آپ کی جدوجہد شروع ہوگی۔ جب جسم پوری طرح تھک چوکا ہے۔
تب بھی آپ نہیں رکتے۔ ایک بار اور محنت کرتے ہیں۔  جب آپ تھکنے کہ باوجود بھی نہیں روکتے تو تب آپ کی  جدوجہد شروع ہوگی۔ 

1 Comments:

گھر بیٹھے لیپ ٹاپ پر کمائی کریں

گھر پر بیٹھے پیسے کمانے کے بہت سے طریقے ہیں. ان میں سے تو کچھ طریقے بہت زیادہ Simple ہیں. جس سے آپ بہت جلدی بور ہو جاؤ گےجیسے کے کچھ لوگ پیسے کمانے کے لیے Online Clicks کرتے ہیں. جس کے بدلے آپ کو پیسے ملتے ہیں.   
یہ Online Clicks کافی Lengthy process ہے. جس سے آپ کافی جلدی بور ہوجاتے ہیں. اور اس سے جو انکم ہوتی ہے وہ بھی بہت ہی کم ہوتی ہے. تو آپ یہ Clicks کرنے والے کاموں سے دور رہے
ہمارے پاس Internet پر پیسے کمانے کے اور بھی بہت ساری Options ہیں. اور ان سے اچھی Income آتی ہے.
تو چلے میں آپ کو بتاتا ہوں کے آپ گھر بیٹھے اپنے Laptop پر کیسے Online Earning کرسکتے ہیں.
1) افیلیٹ مارکیٹ (Affiliate Marketing)
آج کے دور میں یہ ایک بہت ہی popular اور بہترین Career ہے. افیلیٹ مارکیٹ کے لیے آپ نے کچھ Website کی چیزیں بیچنی ہوتی ہیں. جس کے بدلے میں آپ کو Commission ملتا ہے. اور اچھا Commission ملتا ہے. اسے Affiliate Marketing  کہتے ہیں.
اس میں جتنی آپ کی Performs اچھی ہوگی اتنی ہی اچھی کمائی ہوگی.
2) ایمازون (Amazon)
یہ دنیا کی سب سے بڑی Website ہے. جس نے افیلیٹ مارکیٹینگ شروع کی تھی 1996 میں, اور اب یہ دنیا کا سب سے بڑا آن لائن سٹور ہے. آپ Amazon پر فری میں افیلیٹ مارکیٹ کا حصہ بن سکتے ہیں. آپ جو بھی چیز اس پر بیچے گے. اس پر آپ کو Commission ملے گا. وہ بھی صرف 24 گھینٹوں میں.
افیلیٹ مارکیٹ کا حصہ بنے کے لیے آپ Google پر سرچ کرےAffiliate Marketing in Pakistan اس میں تین ویب سائٹ آئیں گی.
1) Godaddy.com
2) Daraz.pk
3) thewarehouse.pk
آپ ان میں سےکیسی کا بھی فری میں حصہ بن سکتے ہے. حصہ بنے کے بعد آپ ان Website کی پراڈکٹ کے لنک Copy کریں. پھر ان Links کو اپنی Facebook اور Website پر لگا دے. اس کے بعد جو کوئی اس لنک سے چیز خریدے گا تو اس کا Commission آپ کو بھی ملے گا.
اس کا سب سے بہترین طریقہ یہ ہے کہ آپ اپنی ایک website بنائے. اس پر یہ لنک لگائیں. اور اپنی Traffic کے حساب سے پیسے کمائے.

0 Comments: